خواتین سے دست درازی کے الزامات ’ مکمل طور پر جھوٹے‘: ٹرمپ

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption گذشتہ روز دو خواتین نے اخبار نیویارک ٹائمز کو بتایا کہ ٹرمپ نے بغیر اجازت ان سے دست درازی کی اور انھیں چوما

امریکہ کی رپبلکن پارٹی کی جانب سے صدارتی امیدوار ڈونلڈ ٹرمپ نے خواتین کو متعدد بارجنسی طور پر حراساں کیے جانے سے متعلق خود پر لگے الزامات کی سختی سے تردید کرتے ہوئےانھیں جھوٹ پر مبنی قرار دیا ہے۔

٭ ڈونلڈ ٹرمپ کے خلاف مزید خواتین کی جانب سے دست درازی کا الزام

٭ ڈونلڈ ٹرمپ ٹیپ: ٹی وی میزبان بلی بش معطل

خیال رہے کہ گذشتہ ہفتے ایک ویڈیو افشا ہوئی تھی جس میں ٹرمپ کو عورتوں سے دست درازی کے بارے میں فحش کلمات ادا کرتے سنا جا سکتا ہے۔

اس ویڈیو پر شدید تنقید کے بعد انھوں نے معافی مانگی تھی۔ تاہم کہا تھا کہ محض 'لاکر روم' میں کی جانے والی گفتگو تھی۔

تاہم گذشتہ روز دو خواتین نے اخبار نیویارک ٹائمز کو بتایا کہ ٹرمپ نے بغیر اجازت ان سے دست درازی کی اور انھیں چوما۔

بعدازاں فلوریڈا میں اپنے حامیوں سے خطاب کرتے ہوئے مسٹر ٹرمپ کا کہنا تھا کہ خواتین کی جانب سے ان پر لگائے جانے والے الزامات ’خوفناک حد تک جھوٹے ہیں۔‘

انھوں نے کہا کہ میڈیا ان کی حریف ہلیری کلنٹن کی ملی بھگت سے یہ الزامات عائد کر رہا ہے۔

اس سے قبل امریکی صدر باراک اوباما کی اہلیہ مشیل اوباما نے ہیمشائر میں اپنے خطاب میں عورتوں سے متعلق ٹرمپ کے عمل کے بارے میں کہا کہ یہ تذلیل پر مبنی اور قابلِ نفرت ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ رہنماؤں کو بنیادی انسانی شائستگی پر پورا اترنا چاہیے۔

نیویارک کے علاقے مین ہیٹن سے تعلق رکھنے والی جیسیکا لیڈز نے کہا کہ وہ جہاز پر ٹرمپ کے قریب بیٹھی ہوئی تھیں کہ ٹرمپ نے انھیں چھونا شروع کر دیا۔

'وہ آکٹوپس کی طرح تھے ۔۔۔ ان کے ہاتھ ہر جگہ تھے۔ یہ (جنسی) حملہ تھا۔'

ریچل کروکس نے کہا کہ ٹرمپ نے ٹرمپ ٹاور کے باہر لفٹ میں انھیں ہونٹوں پر چوما تھا۔ اس وقت ان کی عمر 22 سال تھی اور وہ اس عمارت میں استقبالیہ کلرک تھیں۔

'یہ بہت غیرمناسب تھا۔ میں بہت پریشان تھی کہ وہ مجھے اس قدر حقیر سمجھتے ہیں کہ میرے ساتھ اس طرح کی حرکت کر سکتے ہیں۔'

دونوں خواتین نے پولیس کو اس بارے میں مطلع نہیں کیا تاہم اپنے خاندان والوں اور دوستوں کو بتا دیا تھا۔

پیل میگزین کی نامہ نگار نتاشا سٹوینوف نے کہا کہ وہ دسمبر 2005 میں ٹرمپ کی شادی کی سالگرہ کے موقعے پر ان کا انٹرویو کرنے گئی تھیں۔

ٹرمپ نے کہا کہ وہ انھیں ایک 'زبردست' کمرہ دکھانا چاہتے ہیں۔ 'ہم اس کمرے میں اکیلے گئے، ٹرمپ نے دروازہ بند کر دیا۔ میں مڑی اور سیکنڈوں کے اندر انھوں نے مجھے دیوار کے ساتھ دھکیل دیا۔' انھوں نے لکھا ہے کہ ٹرمپ نے اس کے بعد ان سے دست درازی کی۔

ایک اور عورت مِنڈی میک گلیویری نے پام بیچ پوسٹ اخبار کو بتایا کہ 2003 میں جب وہ 23 سال کی تھیں تو ٹرمپ نے فلوریڈا کے ایک کلب میں انھیں نامناسب طریقے سے چھوا تھا۔ ان کے ساتھی کین ڈیویڈوف نے اس کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ منڈی نے انھیں بتایا تھا کہ ٹرمپ نے ان سے دست درازی کی تھی۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں