یمن میں اغوا ہونے والے آسٹریلوی کوچ کی ویڈیو انٹرنیٹ پر جاری

تصویر کے کاپی رائٹ TWITTER - @YEMENPOSTNEWS
Image caption یمن میں غیر ملکیوں کو اغوا کیے جانے کے واقعات تواتر سے سامنے آتے رہتے ہیں

یمن میں اغوا ہونے و الے ایک آسٹریلوی فٹبال کوچ کی ویڈیو جاری کی گئی ہے جس میں وہ کہہ رہے ہیں کہ ان کے اغواکاروں نے آسٹریلوی حکومت سے ان کی بازیابی کے لیے تاوان کا مطالبہ کیا ہے۔

انٹرنیٹ پر جاری ہونے والی اس ویڈیو میں 56 سالہ کریگ بروس مک ایلسٹر نے بتایا کہ انھیں ایک نامعلوم گروہ نے اغوا کیا ہے۔

بدھ کے روز آسٹریلیا نے کہا تھا کہ وہ اپنے ایک شہری کے اغوا ہونے سے باخبر ہیں۔

کریگ بروس مک ایلسٹر کے بارے میں خیال ظاہر کیا جا رہا ہے کہ وہ صنعا میں یوتھ فٹبال ٹیم کی کوچنگ کرنے کے لیے یمن میں چھ سال سے مقیم تھے۔

24 سکینڈ کی ویڈیو میں مک ایلسٹر کو یہ کہتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے اور انھیں کوئی نقصان نہیں پہنچایا گیا ہے۔ اس ویڈیو میں وہ کہہ رہے ہیں کہ ’مجھے یہاں ایک گورپ نے اغوا کیا ہے۔‘

وہ کہہ رہے ہیں کہ ’آسٹریلوی حکومت وہ پیسہ بھیج دے جس کا انھوں نے مطالبہ کیا ہے۔‘

تاہم تاوان کی رقم کے حوالے سے کوئی ذکر نہیں کیا گیا ہے اور کسی بھی گورپ کی جانب سے تاحال اغوا کی ذمہ داری قبول کرنے کا دعوی نہیں کیا گیا ہے۔

یمن میں غیر ملکیوں کو اغوا کیے جانے کے واقعات تواتر سے سامنے آتے رہتے ہیں۔

خیال رہے کہ یمن میں حوثی باغیوں اور یمنی صدر منصور ہادی کی فورسز کے درمیان شدید لڑائی جاری ہے۔

اقوام متحدہ کے مطابق اب تک یمن میں جاری جنگ کے نتیجے میں تقریباً سات ہزار افراد مارے جا چکے ہیں جن میں زیاد تعداد عام شہریوں کی ہے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں