دس چیزیں جن سے ہم گذشتہ ہفتے لاعلم تھے

تصویر کے کاپی رائٹ Thinkstock

1۔ 85 سال کی عمر میں میراتھن دوڑ تین گھنٹے اور 56 منٹوں میں مکمل کرنا ممکن ہے۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں (رنرز ورلڈ)

2۔ شنگھائی میں سویڈش سٹور آئکیا نے بزرگ جوڑوں کی جانب سے دکان کے ریستوران کو ملاقات کی جگہ کے طور پر استعمال کرنے کی حوصلہ شکنی کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں

3۔ آپ نوبل انعام واپس یا رد نہیں کر سکتے۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں ( ڈیلی ٹیلی گراف)

4۔ انڈیا میں اوبر تو ہے لیکن ٹریکٹرز کے لیے۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں

5۔ ترکی میں سکول کی کتابوں میں انگریزی حروف ایف اور جی سے شروع ہونے والے جیومیٹری پزلز کو شامل نہیں کیا جائے گا، ان حروف سے حکومت کی غیر پسندیدہ شخصیت فتح اللہ گولن کا نام شروع ہوتا ہے۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں ( دی اکانومسٹ)

تصویر کے کاپی رائٹ Thinkstock
Image caption انڈیا میں کسانوں کو اکثر ٹریکٹر کرائے پر حاصل کرنے کے لیے بھاری قیمت ادا کرنا پڑتی ہے

6۔ آدھے امریکی نوجوان چہروں سے پہچاننے والے ڈیٹا بیس میں موجود ہیں۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں (دی گارڈیئن)

7۔ جارحانہ ڈرائیوروں کے خیال میں بغیر ڈرائیور کے چلنے والی گاڑیوں کو ڈرانا آسان ہوگا۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں (ایف ٹی)

8۔ فٹبال کلب ایگزیٹر سٹی کے ایک فین نے 10 پاؤنڈز کی شرط لگائی کہ 2008 سے کھیلے جانے والا ہر میچ ان کی ٹیم چار، ایک سے جیتے گی، اور ان کے خیال میں وہ چھ سو پاؤنڈز جیت چکے ہیں۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں

9۔ الاباما میں نامکمل جوہری بجلی گھر کو خریدنے کے لیے کم از کم خرچ 36.4 ملین ڈالر آسکتا ہے۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں (ٹایمز فری پریس)

10۔ قوس قزح رات میں بھی ظاہر ہو سکتی ہے۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں