برما کے مسلمانوں کی حالتِ زار پر آنگ سان سوچي کی خاموشی
اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

برما کے مسلمانوں کی حالتِ زار پر آنگ سان سوچي کی خاموشی

برما يا ميانمار ميں فوج کے ہاتھوں مسلمان شہريوں کے ساتھ زيادتيوں کی بڑھتی ہوئی اطلاعات کے تناظر ميں ملک کی رہنما آنگ سان سوچي پر دباؤ بڑھتا جا رہا ہے۔ حکام کا الزام ہے کہ اقليتي مسلم روہنجيا برادري کے مشتبہ شدت پسندوں نے چند ہفتے پہلے بنگلہ ديش کے ساتھ سرحدی علاقے ميں کيے گئے حملوں ميں نو پوليس اہلکاروں کو ہلاک کر ديا تھا۔ اِس کے بعد سے وہاں سے ماورائے عدالت ہلاکتوں اور خواتين کے ريپ کی خبريں آ رہی ہيں۔ رخائن سے جونا فشر کی رپورٹ پيش کر رہے ہيں عارف شميم۔