مہمانوں کے ’شور مچانے‘ پر میزبان نے گولی مار دی

تصویر کے کاپی رائٹ BAY COUNTY SHERIFF'S OFFICE
Image caption ایلانہ سیول نے پولیس کو بتایا کہ جب ان کے مہمانوں نے شراب نوشی کے بعد شور مچانا شروع کر دیا تو ان کا صبر کم ہونا شروع ہوگیا

امریکی ریاست فلوریڈا میں پولیس کا کہنا ہے کہ ایک خاتون نے اپنے مہمانوں کے زیادہ 'شور مچانے' پر انھیں گولیاں مار دیں۔

شہر پاناما سٹی میں 32 سالہ ایلانہ انیٹ سیول اپنے گھر پر ایک جوڑے کی میزبانی کر رہی تھیں جب بظاہر ان کے مہمانوں نے زیادہ شور مچایا، جس پر ایلانہ نے انھیں گھر سے نکل جانے کے لیے کہا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ بات نہ ماننے پر انھوں نے اپنے دونوں مہمانوں کی ٹانگوں میں گولیاں مار دیں۔

متاثرہ جوڑے کو ہسپتال لے جایا گیا ہے اور ان کی حالت خطرے سے باہر ہے۔

ایلانہ سیول پر مقدمہ درج کر کے انھیں گرفتار کر لیا گیا ہے۔

بے کاؤنٹی پولیس نے بی بی سی کو بتایا متاثرہ مہمان خاتون کرسٹی جو موہر ہیں، جو اپنے ایک ساتھی کے ساتھ ایلانہ سیول کے گھر پر مقامی وقت کے مطابق تقریباً ایک بجے رات کو پہنچیں۔

اُن کی اپنے ساتھی سے ملاقات کچھ ہی دیر قبل ایک قریبی شراب خانے پر ہوئی تھی۔

ایلانہ سیول نے پولیس کو بتایا کہ جب ان کے مہمانوں نے شراب نوشی کے بعد شور مچانا شروع کر دیا تو ان کا صبر کم ہونا شروع ہوگیا۔ اور اس موقعے پر انھوں نے اپنے مہمانوں کی رخصتی کو یقینی بنانے کے لیے .22 کیلیبر پستول نکال لیا۔

اس واقعے میں کرسٹی موہر کی دونوں ٹانگوں میں گولیاں لگی ہیں، ان کے ساتھی (جن کا نام ظاہر نہیں کیا گیا ہے) کو ایک گولی لگی جبکہ ایلانہ کے اپنے بوائے فرینڈ کو بھی گولی لگی ہے۔

کرسٹی موہر نے پولیس کو بتایا کہ ان کے خیال میں کُل آٹھ یا نو گولیاں فائر کی گئیں۔

ادھر ایلانہ کے بوائے فرینڈ نے پولیس سے اعتراف کیا ہے کہ انھوں نے ہی ایلانہ کو پستول لانے کا مشورہ دیا تھا۔ ایلانہ کے بوائے فرینڈ نے پولیس کو بتایا کہ انھوں نے ایلانہ کو یہ کہہ رکھا تھا کہ اگر کوئی شخص آپ کی پراپرٹی پر موجود ہو اور تین مرتبہ وہاں سے جانے کے کہنے کے باوجود وہ روانہ نہ ہو تو آپ اسے گولی مار سکتے ہیں۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں