امریکی ریاست ٹینیسی میں آتشزدگی سے ہلاکتوں کی تعداد 10 تک پہنچ گئی

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

امریکی ریاست ٹینیسی کے مختلف علاقوں میں جنگل میں لگنے والی آگ کے نتیجے میں ہلاک ہونے والے افراد کی تعداد 10 ہو گئی ہے۔

ریاست کے شہرگٹلینبرگ اور پیجن فورج سب سے زیادہ متاثر ہوئے ہیں۔

بدھ کو بارش کی وجہ سے آگ پر قابو پانے میں مدد ملی تاہم حکام کا کہنا ہے کہ آگ دوبارہ بھڑک سکتی ہے کیونکہ کئی ماہ سے خشک سالی کی وجہ سے زمین بے حد خشک ہو چکی ہے۔

اطلاعات کے مطابق آگ پیر کو ایک شخص کی وجہ سے لگی اور اس کے نتیجے میں سیاحی شہر گٹلینبرگ سب سے زیادہ متاثر ہوا جہاں سے 14 ہزار افراد کو محفوظ مقامات پر منتقل کرنا پڑا۔

گٹلینبرگ فائر بریگیڈ کے چیف گریگ ملر کے مطابق آگ کے نتیجے میں جگہ جگہ درخت اور بجلی کی تاریں گر رہی تھیں اور ہمیں چند منٹ کے اندر اندر 20 مقامات پر آگ بجھانے کے لیے جانا پڑا جہاں آگ بڑھتی ہی جا رہی تھی۔'

گٹلینبرگ میں آگ کے نتیجے میں جھلسنے والے 45 افراد ہسپتال میں زیر علاج ہیں اور علاقے میں تقریباً 7 سو عمارتیں آگ کی وجہ سے متاثر ہوئی ہیں۔

ٹینیسی کے محکمۂ زراعت کے مطابق 26 مقامات پر لگنے والی آگ کے نتیجے میں 12 ہزار ایکٹر رقبہ متاثر ہوا۔

ٹینیسی کے علاوہ ہمسایہ ریاست جنوبی اور شمالی کیرولائنا بھی کئی ماہ سے خشک موسم کی وجہ سےمختلف مقامات پر لگنے والی آگ سے نمٹنے کی کوششیں کر رہی ہیں۔