سویڈن میں’ گینگ ریپ‘ اور اس کی ویڈیو براہ راست نشر کرنے پر تین افراد گرفتار

تصویر کے کاپی رائٹ EPA

سویڈن میں پولیس نے ایک خاتون سے مبینہ ریپ اور اس واقعے کو فیس بک پر براہ راست نشر کرنے کے شک میں تین افراد کو گرفتار کیا ہے۔

سویڈن کے شہر اوپسالا کی پولیس کو ایک خاتون نے گینگ ریپ کی ویڈیو فیس بک پر دیکھنے پر آگاہ کیا۔

انٹرنیٹ، خواتین اور بلیک میلنگ

فیس بک پر ریپ کی ویڈیو ایک گروپ میں نشر کی کی گئی تھی اور اس کو دیکھنے والی ایک خاتون کے مطابق ویڈیو کے اختتام پر ایک شخص کو یہ کہتے ہوئے سنا جا سکتا ہے کہ' تمہارا ریپ کیا گیا ہے'، اور اس کے بعد یہ شخص قہقہ لگاتا ہے۔

پولیس نے بعد میں تصدیق کی ہے کہ اس ویڈیو کو متعدد افراد نے دیکھا ہے جبکہ فیس بک کے مطابق جس گروپ میں ویڈیو کو نشر کیا گیا اس کے ہزاروں ارکان ہیں۔

پولیس کے مطابق ایک مقامی فلیٹ سے 19 سے 25 برس کی عمر کے تین مردوں کو گرفتار کیا گیا ہے جبکہ فلیٹ پر ایک عورت بھی موجود تھی۔

اس ویڈیو کے بارے میں پولیس کو مطلع کرنے والی خاتون نے مقامی اخبار کو بتایا کہ اس نے ویڈیو میں دیکھا کہ ملزمان میں ایک پاس پستول بھی تھا۔

انھوں نے کہا ہے کہ اس ویڈیو کو 60 کے قریب افراد دیکھ رہے تھے۔

انھوں نے بتایا کہ اس ویڈیو کے نیچے ایک شخص نے لکھا' ہا ہا، ایک کے مقابلے میں تین۔'

ویڈیو کو آن لائن دیکھنے والے ایک اور شخص نے مقامی ذرائع ابلاغ کو بتایا کہ اس نے ایک دوسری ویڈیو میں اس خاتون کو دوبارہ دیکھا جس میں وہ ریپ ہونے سے انکار کر رہی ہے جبکہ اس بارے میں قیاس آرائیاں کی جا رہی ہیں کہ ہو سکتا ہے کہ اس خاتون نے اپنی رضامندی سے ایسا کیا ہو۔

سویڈن کے سرکاری ٹی وی کے مطابق اطلاع ملنے پر پولیس جب جائے وقوعہ پر پہنچی تو اس وقت ملزمان بھی ایک اور ویڈیو بنا رہے تھے۔

اسی بارے میں