پسندیدہ فلم کے منظر کی نقل کر کے بھائی کو بچا لیا

سی اینڈ جی نیوز پیپرز تصویر کے کاپی رائٹ Patricia O'Blenes/C&G Newspapers

ہالی وڈ کے سٹار ڈوین جانسن (دا راک) نے اس دس سالہ لڑکے کو ’حقیقی زندگی کا ہیرو' قرار دیا ہے جس نے ان کی ایک فلم کے منظر کی نقل کرتے ہوئے اپنے چھوٹے بھائی کی جان بچا لی۔

یہ واقعہ اس وقت پیش آیا جب جیکب اوکونر نے اپنے دو سالہ بھائی ڈلن کو سوئمنگ پول میں اوندھے منہ تیرے ہوئے دیکھا۔

اس موقعے پر جیکب نے جلد بازی نہیں کی اور نہ ہی اپنے بھائی کی مدد کے لیے ایک گاؤن تلاش کیا۔ انھوں نے اس کی بجائے اپنی پسندیدہ فلم سان اینڈریاز کا ایک سین یاد کیا۔

طبّی امداد فراہم کرنے والے نے اپنی جان کیسے بچائی؟

پانچ سالہ بچے نے باپ کی جان بچائی

امریکی ریاست مشی گن سے تعلق رکھنے والے جیکب نے اپنے بھائی کو سوئمنگ پول سے کھینچ کر باہر نکالا اور ان کے سینے کو باکل اسی طرح دبانا شروع کر دیا جس طرح فلم سان اینڈریاز کے سین میں دا راک نے کیا تھا۔

دو سالہ ڈلن کو مکمل صحت یابی کے لیے ہسپتال منتقل کیا گیا۔

جب ڈوین جانسن کو اس بارے میں پتہ چلا تو انھوں نے ٹویٹ کیا: 'واہ زبردست کہانی، تم اصل زندگی کے ہیرو ہو، ہمیں تم پر فخر ہے۔'

جیکب کی والدہ نے بی بی سی کو بتایا: 'جیکب نے جو کیا وہ بہت حیران کن ہے، میرے پاس الفاظ نہیں ہیں، مجھے اس پر بہت فخر ہے۔'

ان کا مزید کہنا تھا: 'میں حیران ہوں کہ جیکب کو فلم کا وہ سین یاد تھا تاہم وہ اس کی پسندیدہ فلم تھی جو اس نے ایک ہفتہ قبل ہی دیکھی تھی۔'

جیکب نے مقامی میڈیا کو بتایا: 'جب میں نے ڈلن کوسوئمنگ پول میں دیکھا تو میں ڈر گیا تھا لیکن پھر مجھے فلم کا وہ سین یاد آیا جس میں زلزلہ آتا ہوا دکھایا گیا تھا، پھر ایک منظر میں سونامی دکھائی گئی جس میں ایک لڑکی ڈوب رہی تھی۔ فلموں میں ایسے ہی دکھایا جاتا ہے کہ وہ لوگوں کو بچاتے ہیں۔'

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں