سپین میں ٹماٹروں کا سالانہ میلہ

سپین کے شہر ویلینشیا کے قریبی علاقے بنول میں رواں ہفتے سالانہ 'لا ٹومیٹينا فیسٹیول' منعقد ہوا۔

ہر سال ماہ اگست کے آخری بدھ کو منعقد ہونے والے اس میلے میں شرکت کے لیے دنیا بھر سے سیاح بھی سپین آتے ہیں۔ میلے میں شریک افراد ایک دوسرے پر ٹماٹر مارتے ہیں۔

ٹماٹر مارنے کے بھی اصول ہیں جن میں سب سے ضروری ہے کہ ٹماٹر مارنے سے پہلے اسے ہاتھ سے پچكا لیا جائے۔

ٹومیٹينا فیسٹیول تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption اس فیسٹیول کا آغاز 1945 میں ہوا تھا اور اس سال 72 واں ٹومیٹينا فیسٹیول منایا گیا
ٹومیٹينا فیسٹیول تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption اس فیسٹول میں حصہ لینے کے لیے ملک و بیرون ملک سے لوگ آتے ہیں. اس سال ٹماٹروں کی اس جنگ میں دنیا بھر سے آئے ہوئے تقریبا 22 ہزار لوگوں نے حصہ لیا
ٹومیٹينا فیسٹیول تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption ٹماٹروں کی یہ جنگ ایک گھنٹے تک جاری رہتی ہے. وقت پورا ہونے کے بعد ٹماٹر نہیں مارے جاتے اور اس کے بعد تمام لوگ نہاتے ہیں
ٹومیٹينا فیسٹیول تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption فیسٹیول میں حصہ لینے والے لوگ اپنے ساتھ کوئی بھی سخت چیز نہیں رکھ سکتے، اس کے علاوہ دوسرے لوگوں کے کپڑے پھاڑنے کی بھی ممانعت ہوتی ہے۔
ٹومیٹينا فیسٹیول تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption اس سال فیسٹیول میں تقریبا 165 ٹن ٹماٹر استعمال کیے گئے
ٹومیٹينا فیسٹیول تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption لا ٹومیٹنا فیسٹیول کو سنہ 2002 میں بین الاقوامی سطح کے فیسٹیول کے طور پر شناخت ملی تھی
ٹومیٹينا فیسٹیول تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption فیسٹیول ختم ہونے کے بعد گھروں کی صفائی کرنا ایک بڑا چیلنج ہوتا ہے

۔