سمندری طوفان نیٹ: چار ریاستوں میں الرٹ جاری

طوفان کے آثار تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption طوفان کے پیش نظر چار امریکی ریاستوں نے ہنگامی صورت حال کا اعلان کیا ہے

سمندری طوفان نیٹ امریکہ کے خلیجی ساحل سے ٹکرا گیا ہے جہاں تیز ہوائیں چل رہی ہیں اور شدید بارش ہو رہی ہے۔

یہ طوفان سنیچر کو رات گئے لوئیزیانا میں میسیسیپی دریا کے قریب پر زمین سے ٹکرایا جس میں 137 کلومیٹر فی گھنٹے کی رفتار سے ہوائیں چل رہی ہیں۔

وہاں سے گزرتے ہوئے مزید شمال کی جانب یہ ایک بار پھر ریاست میسیسیپی میں بیلوکسی کے مقام پر زمین سے ٹکرایا۔

٭ سمندری طوفان ’ارما‘ فلوریڈا کے جزائر پر

٭ فلوریڈا میں طوفان، 65 لاکھ مکانوں کی بجلی منقطع

تیزی سے بلند ہوتے ہوئے سمندری پانی کے خدشے کے پیش نظر لوئیزیانا، میسیسیپی، ایلاباما اور فلوریڈا کے بعض حصوں میں ساحلی علاقوں کو خالی کرنے کا انتباہ جاری کیا گیا۔

خیال رہے کہ نیٹ سمندری طوفان کی زد میں آنے سے نیکاراگوا، کوسٹاریکا اور ہونڈوراز جزائر میں کم از کم 25 افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔

اس کے بعد اس طوفان کی طغیانی میں کمی واقع ہوئی ہے اور اس کی شدت کو درجہ ایک قرار دیا گیا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption نیو آرلیانز کے رہائشی طوفان سے قبل اس سے بچنے کی ترکیب کرتے نظر آ رہے ہیں

اگرچہ گذشتہ ماہ آنے والے طوفان ماریا اور ارما کی طرح یہ زیادہ شدید نہیں ہے تاہم حکام نے کہا ہے کہ نیٹ تیزی سے آگے بڑھ رہا اور یہ جنوبی علاقوں میں سیلاب کا سبب ہو سکتا ہے۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے سنیچر کو لوئیزیانا کے لیے ہنگامی صورت حال کا اعلان کیا ہے اور ریاست کو طوفان سے نمٹنے کے لیے تیاری اور ممکنہ امدادی کارروائی میں وفاق سے امداد کی بات کہی ہے۔

ایلاباما میں ریپبلکن گورنر کے آئیوی نے طوفان کی زد میں آنے والے علاقے کے رہائیشیوں سے تمام تر احتیاط برتنے کے لیے کہا ہے۔

خلیجی ساحل پر موجود پانچ بندرگاہوں کو احتیاطی طور پر بند کر دیا گیا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption کوسٹا ریکا سمندری طوفان نیٹ کی زد میں آیا

امریکی خلیج میں زیادہ تر پیٹرول سٹیشنز کو طوفان کی وجہ سے بند کر دیا گیا ہے اور وہاں سے سٹاف کو ہٹا لیا گیا ہے۔

تازہ ترین اطلاعات کے مطابق نیشنل ہریکین سینٹر نے دریائے پرل کے مہانے سے ایلاباما فلوریڈا کی سرحد تک طوفان کا انتباہ جاری کیا ہے اور بعض نچلی سطح سے انخلا کا حکم جاری کر دیا گيا ہے۔

طوفان سے قبل لوئیزیانا کے گورنر جان بیل ایڈوارڈس نے ہنگامی صورت حال کا اعلان کیا ہے اور کہا ہے کہ ایک ہزار سے زیادہ نیشنل گارڈز کے فوجی بلائے گئے ہیں جن میں سے کئی کو نیو آرلیانز میں حالات کا جائزہ اور پانی کی نکاسی کا انتظام دیکھنے کے لیے روانہ کیا گیا ہے۔

جبکہ نیو آرلیانز میں شام چھ بجے سے لازمی کرفیو نافذ کیا گیا ہے اور ابھی وہاں طوفان کا انتباہ نافذ ہے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں