’ٹرمپ نے امریکہ کو تیسری جنگِ عظیم کی راہ پر ڈال دیا ہے‘

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption سینیٹر باب کروکر کا کہنا ہے کہ صدر کی ٹوئیٹس غلط بیانی پر مبنی ہوتی ہیں

امریکی سینیٹ کی خارجہ امور کی کمیٹی کے رپبلکن چیئرمین کا کہنا ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ملک کو تیسری جنگِ عظیم کے راستے پر ڈال دیا ہے۔

سینیٹر باب کروکر کا کہنا ہے کہ صدر ٹرمپ صدارت کے عہدے کو کسی 'ریئلیٹی شو' کی طرح استعمال کر رہے ہیں۔

موجودہ صدر کی اپنی ہی پارٹی کی جانب سے ایسا بیان خاصی اہمیت کا حامل ہے۔

’امریکی فوج شمالی کوریا سے نمٹنے کے لیے تیار ہے‘

'اب شمالی کوریا کے معاملے پر مزید صبر نہیں کیا جا سکتا'

شمالی کوریا ایسے پھنسے گا جیسے پہلے کوئی نہیں پھنسا: ڈونلڈ ٹرمپ

گذشتہ سال صدر ٹرمپ باب کروکر کو وزیر خارجہ بنانے پر غور کر رہے تھے۔

باب کروکر نے اتوار کو روزنامہ نیو یارک ٹائمز کے ساتھ ٹیلی فون پر انٹرویو میں کہا کہ انہیں صدر کے رویے پر تشویش ہے۔

ان کا کہنا تھا 'میرے خیال میں ڈونلڈ ٹرمپ کو اندازہ ہی نہیں کہ جب امریکی صدر کچھ کہتا یا کچھ کرتا ہے تو اس کے اثرات پوری دنیا پر دکھائی دیتے ہیں'۔

تصویر کے کاپی رائٹ EPA
Image caption باب کروکر کا کہنا ہے کہ انہیں صدر کے روئیے پر تشویش ہے

ان کا کہنا تھا کہ صدر جس طرح جوہری ہتھیاروں سے لیس شمالی کوریا کو للکارتے ہیں وہ امریکہ کو تیسری جنگ عظیم کی جانب دھکیل سکتا ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ یہ بات ان کی سمجھ سے باہر ہے کہ 'صدر ٹرمپ ایسی باتیں ٹویٹ کیوں کرتے ہیں جو سچ نہیں'۔

ان کا کہنا تھا کہ میں جانتا ہوں کہ ہر روز وائٹ ہاؤس میں صدر ٹرمپ کو کس طرح ایسی باتوں سے روکنا پڑتا ہے۔

صدر ٹرمپ اور باب کروکر کے درمیان یہ تلخ کلامی اتوار کی صبح اس وقت شروع ہوئی جب صدر ٹرمپ نے ٹویٹ کیا تھا کہ مسٹر باب کروکر چاہتے ہیں کہ صدر دوبارہ الیکشن کے لیے ان کی حمایت کریں اور انھوں نے انکار کر دیا۔

باب کروکر نے صدر کے اس دعوے کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ 'یہ شرم کی بات ہے کہ وائٹ ہاؤس ایک ڈے کیئر نرسری بن گیا ہے جہاں ٹرمپ کو ایسی باتوں سے روکا جاتا ہے لگتا ہے آج کوئی شفٹ پر نہیں ہے'۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں