فرانس میں بچے کا نام 'جہاد' رکھا جا سکتا ہے یا نہیں؟

جہاد تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption مسلمان جہاد کی مختلف تشریح و تعبیر کرتے ہیں لیکن دنیا بھر میں اسے دہشت گردی کے ساتھ منسلک کیا جاتا ہے

فرانس میں ججز اس بات پر غور کر رہے ہیں کہ آیا کوئی اپنے بچے کا نام 'جہاد' رکھ سکتا ہے یا نہیں۔

فرانسیسی نیوز ایجنسی اے ایف پی کے مطابق قانونی ذرائع نے بتایا ہے کہ جنوبی فرانس میں ججز اس معاملے کے متعلق فیصلہ دینے والے ہیں۔

اگست کے مہینے میں ایک بچے کو 'جہاد' نام سے تولوز شہر کے میئر کے دفتر میں رجسٹر کروایا گیا تھا جس کے بعد دفتر نے اس معاملے کو استغاثہ کے پاس بھیج دیا۔ ممکنہ طور پر والدین کو بچے کا نام تبدیل کرنے کے لیے کہا جائے گا۔

قانونی ذرا‏ئع نے بتایا: 'اس معاملے میں کارروائی جاری ہے۔'

٭ فرانس میں بھی بنیادپرست اسلام اور عالمگیریت کے خلاف لہر

٭ فرانس میں مسجد کے باہر فائرنگ، آٹھ افراد زخمی

خیال رہے کہ دنیا میں 'جہاد' کو انتہا پسندوں کے ساتھ منسلک کیا جاتا ہے جنھوں نے حالیہ برسوں میں فرانس کو بار بار نشانہ بنایا ہے اور ایک اندازے کے مطابق حالیہ برسوں میں 200 سے زیادہ افراد ان کے حملوں میں ہلاک ہو چکے ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption فرانس میں حالیہ برسوں میں کئی حملے ہوئے ہیں جن میں 200 سے زیادہ افراد ہلاک ہوئے ہیں

فرانس میں اب کوئی کنبہ اپنے بچے کا پہلا نام رکھنے کے لیے آزاد ہے لیکن سنہ 1993 سے قبل انھیں ناموں کی منظور شدہ ایک فہرست سے ہی نام منتخب کرنا ہوتا تھا۔ بہر حال اب بھی مقامی حکام اگر یہ محسوس کریں کہ کوئی نام بچے کے لیے نقصان دہ ہو سکتا ہے تو وہ اس معاملے کو استغاثہ کے پاس بھیج سکتے ہیں۔

نیس کے ریوائرا شہر کے میئر کے دفتر نے گذشتہ سال نومبر میں ایک بچے کا نام 'محمد میراہ' رکھنے پر معاملے کو استغاثہ کے سپرد کردیا تھا کیونکہ محمد میراہ نام کے بندوق بردار شخص نے سنہ 2012 میں سات افراد کو ہلاک کر دیا تھا جن میں تین یہودی سکول کے طلبہ بھی تھے۔

اس کے بعد والدین نے اس بچے کا دوسرا نام رکھنے کا فیصلہ کیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption حملے میں شامل لوگ کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ وہ اسلام کے شدت پسند نظریات کے حامل رہے ہیں

سنہ 2013 میں ایک فرانسیسی ماں اس وقت شہ سرخیوں میں آئی تھی جب انھوں نے جہاد نام کے اپنے بچے کو ایک ایسی ٹی شرٹ میں سکول بھیجا جس میں لکھا تھا: 'میں ایک بم ہوں' اور 'جہاد 11 ستمبر کو پیدا ہوا‘۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں