دوہری شہریت: آسٹریلیا کے نائب وزیرِ اعظم نااہل قرار

بارنبی جوئس تصویر کے کاپی رائٹ EPA
Image caption عدالت نے کہا کہ بارنبی جوئس کا انتخاب غلط تھا

آسٹریلیا کی ایک ہائی کورٹ نے نائب وزیرِ اعظم بارنبی جوئس کو یہ کہہ کر نااہل قرار دے دیا ہے کہ ان کے پاس دوہری شہریت تھی اور ان کا انتخاب غلط تھا۔

عدالت کا کہنا ہے کہ اس سال جولائی میں ہونے والے انتخابات میں چار دوسرے ارکانِ پارلیمان کا انتخاب بھی غلط تھا۔

آسٹریلیا کے آئین کے مطابق دوہری شہریت کے حامل افراد انتخابات میں حصہ نہیں لے سکتے۔

بارنبی جوئس کے پاس آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ کی مشترکہ شہریت تھی۔

ان کے جانے سے حکومت کو حاصل ایک نشست کی برتری ختم ہو گئی ہے، جس کے بعد سے اسے شدید خطرات لاحق ہو گئے ہیں۔

تاہم انھوں نے انتخابات کے بعد اپنی نیوزی لینڈ کی شہریت چھوڑ دی تھی، جس کے باعث وہ ضمنی انتخابات میں حصہ لے دوبارہ منتخب ہو سکتے ہیں۔

انھوں نے فیصلے کے بعد کہا: 'میں عدالت کے فیصلے کا احترام کرتا ہوں۔ ہم ایک شاندار جمہوریت میں رہتے ہیں جہاں ہمیں آزادیوں سے لطف اندوز ہونے کے لیے بعض قدغنوں کا بھی سامنا کرنا پڑتا ہے۔ میں عدالت کا ان کے غور و فکر پر شکریہ ادا کرتا ہوں۔'

آسٹریلیا میں جولائی کے بعد سے دوہری شہریت کا معاملہ خاصا گرم ہے، اور اس کے بعد سے درجنوں ارکانِ اسمبلی اپنی پوزیشن واضح کر چکے ہیں۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں