شکاگو میں بٹ کوائن میں پہلی بار تجارت کا آغاز

کرنسی بٹ کوائن تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption ستمبر میں بٹ کوائن کی قدر پہلی بار 5000 ڈالر سے بڑھ گئی تھی

ڈیجیٹل اور ورچوئل کرنسی بٹ کوائن سے ایک اہم ایکسچینج میں پہلی بار خرید و فروخت کا سلسلہ شروع ہو گيا ہے۔

اتوار کو 11 بجے رات میں شکاگو کی سی بی او ای فیوچرز ایکسچینج پر اسے لانچ کیا گیا جس کے بعد سرمایہ کاروں کو یہ سہولت ملی کہ وہ اس کی قیمت کے بڑھنے یا کم ہونے پر بازی لگائیں۔

اس کرنسی کے مستقبل کے کاروبار میں اہم رول ادا کرنے کی توقع میں اس کی قیمت میں تیزی سے اضافہ دیکھا گیا ہے۔

بٹ کوائن کی سی بی او ای میں شمولیت کے بارے میں بعض لوگوں کا خیال ہے کہ یہ اس کرنسی کو 'جائز تسلیم کیے جانے کی جانب ایک قدم ہے۔'

اس کے بعد یہ توقع ظاہر کی جا رہی ہے کہ آئندہ ہفتے سی بی او ای کا حریف شکاگو مرکنٹائل ایکسچینج بھی اس کو اپنی فہرست میں شامل کر سکتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

٭ کون ہے جس نے بٹ کوائن فروخت نہیں کیے؟

٭ ڈیجٹل کرنسی بٹ کوائن کی قیمت میں زبردست اضافہ

اہم ایکسچینج میں پہلی بار اس کرنسی کے شامل کیے جانے کی امید میں گذشتہ دنوں اس متنازع کرنسی کی قیمت دس ہزار امریکی ڈالر سے زیادہ ہو گئی اور جمعرات کو یہ 17 ہزار ڈالر تک پہنچ گئی جس کے بعد اس کی قیمت میں گراوٹ نظر آئی ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption جڑواں بھائی کیمرون اور ٹائلر ونکل ووس بٹ کوائن کے اولین ارب پتیوں میں شامل ہیں

کوائن ڈیسک ڈاٹ کام کے مطابق پیر کو بٹ کوائن کی مالیت 15230 امریکی ڈالر تھی۔

بٹ کوئن کے متعلق معلومات

  • یہ عام کرنسی کا 'متبادل' ہے جو کہ اکثر آن لائن استعمال ہوتا ہے۔ اس کی اشاعت نہیں ہوتی ہے اور بینکوں میں یہ نہیں چلتا۔
  • ہر دن 3600 بٹ کوائن تیار ہوتے ہیں اور ابھی ڈیڑھ کروڑ سے زیادہ بٹ کوائن استعمال میں ہیں۔
  • بٹ کوائن کو کرنسی کی ایک نئی قسم کہا جاتا ہے۔ اگرچہ دیگر کرنسیوں کی طرح اس کی قدر کا تعین بھی اسی طریقے سے ہوتا ہے کہ لوگ اسے کتنا استعمال کرتے ہیں۔
  • بٹ کوائن کی منتقلی کے عمل کے لیے 'مِننگ' کا استعمال ہوتا ہے جس میں کمپیوٹر ایک مشکل حسابی طریقہ کار سے گزرتا ہے اور 64 ڈیجٹس کے ذریعے مسئلے کا حل نکالتا ہے۔
  • ڈیٹا ٹریک تحقیق کے نک کولاز نے کہا کہ بٹ کوائن کے مستقبل میں ایکسچینج میں شامل کیے جانے نے اسے جواز بخشا ہے کہ یہ ملکیت ہے جس کی آپ تجارت کر سکتے ہیں۔'

فیوچرز ایک قسم کا ماخوذ یا مشتق معاہدہ ہے جو بٹ کوائن کی قیمتوں میں اتار چڑھاؤ کی بنیاد پر اس میں تجارت کی سہولت فراہم کرتا ہے جبکہ ایسی تجارت میں اپنے آپ میں کرنسی پر مالکانہ حقوق کی ضرورت نہیں ہوتی ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

ایکسچینج کے ایک اندرونی شخص نے بتایا کہ سی بی او ای پر بٹ کوائن کی ابتدا دھیمی ہے 'کوئی جام نہیں چھلکائے گئے۔'

بہر حال سی بی او ای نے ٹویٹ کیا ہے کہ ان کی ویب سائٹ کی رفتار سست ہے اور جز وقتی طور پر اس کی خدمات حاصل نہیں ہو سکتی ہیں لیکن تمام ٹریڈنگ نظام معمول کے مطابق کام کر رہا ہے۔

واضح رہے کہ سی بی او ای اور سی ایم ای پر بٹ کوائن میں تجارت اسی وقت ممکن ہو سکی جب امریکی کوموڈیٹیز اینڈ فیوچرز ٹریڈنگ کمیشن نے اس کی منظوری دی۔

ضابطہ کاروں نے اس میں شامل زیادہ خطروں کے متعلق صارفین کو متنبہ کیا ہے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں