16 سال کی عمر میں زبردستی کی شادی اور مار
اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

اردن کے پناہ گزین کیمپ میں چھوٹی عمر کی لڑکیوں کی شادی ایک معمول کی بات ہے

شام سے جنگ اور غربت سے بھاگ کر آنے والے پناہ گزینوں میں چھوٹی عمر میں ہی لڑکیوں کی شادیاں کر دی جاتی ہیں۔

ان لڑکیوں میں سے ایک لڑکی سلام کی کہانی۔