سپین: تاخیر سے تنگ آکر طیارے کے ہنگامی دروازے سے نکلنے والا مسافر گرفتار

تصویر کے کاپی رائٹ EPA
Image caption فضائی کمنپی کے ترجمان کا کہنا تھا کہ یہ واقعہ ائیر پورٹ کے حفاظتی قوانین کی خلاف ورزی تھا۔

طیارے سے اترنے میں تاخیر سے تنگ آ کر یورپ کی سستی فضائی کمپنی رائن ایئر کے ایک مسافر کو جہاز کے پر پر جا بیٹھنے کے جرم میں گرفتار کر لیا گیا۔

پولینڈ سے تعلق رکھنے والا پچاس سالہ مسافر لندن سے سپین کے ملینگا ائیر پورٹ کی پرواز پر سوار تھا لیکن جب طیارہ ایک گھنٹے کی تاخیر سے میلینگا پہنچا اور آدھے گھنٹے تک مسافروں کو اترنے نہیں دیا گیا تو مذکورہ مسافر نے ایمرجنسی دروازہ کھولا اور جہاز کے وِنگ پر بیٹھ گیا۔

اس پر ائیر پورٹ سکیورٹی والوں نے اس شخص کو گرفتار کر لیا۔

طیارے میں سوار ایک دوسرے مسافر نے جو ویڈیو بنائی اس میں اس شخص کو ایمرجنسی دروازے کے باہر تسلی سے اپنا سامان رکھتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے اور پس منظر میں دیگر مسافروں کو ہنستے ہوئے سنا بھی جا سکتا ہے۔

برطانوی اخبار ڈیلی میل نے مذکورہ پرواز کے دو مسافروں سے بات کی جن میں سے ایک کا کہنا تھا کہ وہ یہ دیکھ کر حیران ہو گئے کہ مسافر نے ہنگامی حالت میں جہاز سے نکلنے والا دروازہ کھولا اور کہا کہ میں اب جہاز کے پر کے راستے باہر جا رہا ہوں۔

تاہم دوسرے مسافر کا کہنا تھا کہ مذکورہ شخص کا دم گھُٹ رہا تھا اور اسے سانس لینے میں مشکل ہو رہی تھی، اس لیے اس نے ایمرجنسی دروازے سے باہر نکلنے کا فیصلہ کیا۔

فضائی کمنپی کے ترجمان کا کہنا تھا کہ یہ واقعہ ائیر پورٹ کے حفاظتی قوانین کی خلاف ورزی تھا۔

ترجمان کے مطابق ملینگا کی پولیس نے مذکورہ مسافر کو فوراً گرفتار کر لیا اور سپین کے حکام ان سے پوچھ گچھ کر رہے ہیں۔

رائن ایئر کے مطابق یہ اپنی نوعیت کا پہلا واقعہ نہیں ہے کیونکہ 2016 میں بھی ایک شخص نے طیارے کی سیڑھی سے اتر کر بھاگنا شروع کر دیا تھا جس پر اسے گرفتار کر لیا گیا تھا۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں