اٹلی میں قطر کے شاہی خاندان کے زیورات چوری ہو گئے

جواہرات تصویر کے کاپی رائٹ EPA

اٹلی کے شہر وینس میں ایک نمائش سے قطر کے شاہی خاندان کے زیورات چوری ہو گئے ہیں۔

پولیس کا کہنا ہے کہ بدھ کی صبح دوک پیلس میں نمائش میں ایک ڈبے سے زیورات کے کئی حصے چرا لیے گئے ہیں۔

پولیس کا کہنا ہے کہ ان زیورات کی قیمت لاکھوں یورو ہو سکتی ہے لیکن انھیں بلیک مارکیٹ میں فروخت کرنا مشکل کیونکہ یہ خاصی شہرت رکھتے ہیں۔

پیرس میں تین ہیرے چوروں کو سزا

ٹرمپ کو دیے گئے 83 سعودی تحائف

معروف افراد کے چوری شدہ ہیرے کیسے بکتے ہیں؟

پولیس نے چوری کی اس واردات کی تفتیش شروع کر دی ہے۔

’مغلوں اور مہاراجاؤں کے خزانے‘ کے نام سے منعقدہ اس نمائش کے لیے 16ویں اور 20ویں صدی کے انڈین جواہرات اکٹھے کیے گئے تھے۔ بدھ کی شام اس نمائش کو اختتام پذیر ہونا تھا۔

یہ زیورات قطر کے حکمراں خاندان الثانی کی ملکیت تھے۔

وینس میں پولیس کا کہنا ہے کہ زیورات پر جڑے جواہرات کو الگ الگ کر بیچا جا سکتا ہے۔

پولیس چیف ویٹو گیگلیارڈی کا کہنا تھا کہ جب چوروں نے واردات کی اس وقت نمائش کا سکیورٹی سسٹم صحیح انداز میں کام نہیں کر رہا تھا۔

خبررساں ادارے اسنا کے مطابق پولیس چیف نے بتایا کہ ’شیشے کا ڈبہ ایسے کھلا تھا جیسے ٹنِ کا کین ہو جبکہ الارم اگر بجا بھی تو بہت دیر سے بجا۔‘

اطالوی پولیس کا کہنا ہے کہ چوری ہونے والے سامان کی تصاویر لندن میں قطری مالکان کو بھجیوا دی گئی ہیں تاکہ وہ اس کی شناخت اور قیمت کے بارے میں بتا سکیں۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں