پیرس میں سیکس ڈولز کے ’قحبہ خانے‘ کے مستقبل کا فیصلہ

پیرس تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption 'ایکس ڈولز' ایک گیمز سینٹر کے طور پر رجسٹرڈ ہے تاہم اس کے مخالفین کا کہنا ہے کہ یہ ایک قحبہ خانہ ہے (فائل فوٹو)

فرانس کے دارالحکومت پیرس میں مقامی ذرائع ابلاغ کے مطابق کونسلرز ایک ایسے کاروبار کے مستقبل کا فیصلہ کرنے والے ہیں جس میں صارفین 89 یورو (109 امریکی ڈالر) کے عوض ایک سیلیکون سیکس ڈول کے ساتھ ایک گھنٹہ گزارتے ہیں۔

کمیونسٹ اور فیمنسٹ گروپوں نے ’ایکس ڈولز‘ نامی اس کاروبار کو بند کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

فی الحال ’ایکس ڈولز‘ ایک گیمز سینٹر کے طور پر رجسٹرڈ ہے تاہم اس کے مخالفین کا کہنا ہے کہ یہ ایک قحبہ خانہ ہے۔

خیال رہے کہ فرانس میں کوئی قحبہ خانہ چلانا یا اس کی ملکیت رکھنا غیرقانونی ہے۔

’ایکس ڈولز‘ فرانسیسی دارالحکومت میں ایک نامعلوم جگہ پر قائم ہے اور گذشتہ ماہ اس کا افتتاح ہوا تھا۔

مقامی اخبار لی پیرسین کے مطابق اس کے صارفین میں زیادہ تر مرد شامل ہیں جبکہ کچھ جوڑے بھی یہاں آتے ہیں۔ اس کے مالک جوشم لوسکئے کی اس سے پہلے الیکٹرنک سگریٹوں کی دکانیں تھی۔

ایکس ڈولز تین کمروں پر مشتمل ہے، ہر ایک کمرے میں ایک سیلیکون سیکس ڈول ہے جس کا قد تقریباً چار فٹ سات انچ ہے اور ان کی مالیت ہزاروں یورو ہے۔

جوشم لوسکئے کا کہنا ہے کہ صارفین آن لائن بکنگ اور رقوم کی ادائیگی کرتے ہیں، اور اس مقام کا پتہ خفیہ رکھا جاتا ہے۔ ان کے مطابق ہمسایوں کو بھی اس کاروبار کی نوعیت کے بارے میں علم نہیں ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption 'ایکس ڈولز' فرانسیسی دارالحکومت میں ایک نامعلوم جگہ پر قائم ہے اور گذشتہ ماہ اس کا افتتاح ہوا تھا (فائل فوٹو)

تاہم اس کے ناقدین اسے بند کروانا چاہتے ہیں۔ ایک کمیونسٹ کونسلر بونیٹ اولالڈج یہ معاملہ کونسل آف پیرس کے سامنے پیش کر رہے ہیں جو کا اجلاس اسی ہفتے بلایا گیا ہے۔

لی پیرسین کے مطابق انھوں نے کہا کہ ’ایکس ڈولز خواتین کی خراب صورت پیش کرتا ہے۔‘

وہ اور ان کے ساتھی کونسلر ایکس ڈولز پر پابندی عائد کرنے کا مطالبہ کر رہے ہیں اور ان کا کہنا ہے کہ یہ ایک قحبہ خانے کی طرح کام کر رہا ہے۔

جوشم لوسکئے کا کہنا ہے کہ یہ ڈولز محض سیکس ٹوائز ہیں اور وہ انھیں خواتین کی خراب تصویر کشی کے طور پر نہیں دیکھتے۔

پیرس فیمنسٹ ایسوسی ایشن کی ترجمان اور وکیل لورین کوئسٹیاکس کا کہنا ہے کہ ’ہر سال فرانس میں 86,000 خواتین کا ریپ ہوتا ہے۔‘

وہ بھی اس جگہ کو بند کرنے کے حق میں ہیں اور ان کا مزید کہنا تھا کہ ’ایکس ڈولز ایک سیکس شاپ نہیں ہے۔ یہ ایسی جگہ ہے جہاں سے پیسہ کمایا جاتا ہے اور جہاں آپ ایک خاتون کا ریپ کرتے ہیں۔‘

اسی بارے میں