دنیا بھر سے گذشتہ ہفتے کی چند بہترین تصاویر

گذشتہ ہفتے دنیا بھر سے موصول ہونے والی خبروں پر مبنی چند منتخب تصاویر یہاں پیش کی جا رہی ہیں۔

برف پر فٹبال تصویر کے کاپی رائٹ Marius Vagens Villanger / Handout/ EPA
Image caption ناروے کے علاقے سوالبارڈ میں فوجیوں کو برف کے ایک بڑے تودے پر گرین لینڈ کے گرد قطب شمالی کے ماحول میں فٹبال کھیلتے دیکھا جا سکتا ہے۔
مارچ فار آور لائف ریلی تصویر کے کاپی رائٹ Lindsey Wasson / Getty Images
Image caption امریکہ اور اس کے باہر ہزاروں افراد نے اسلحے پر پابندی کے سخت قانون کے لیے مظاہرہ کیا۔ یہ مظاہرے فلوریڈا کے ایک سکول میں 17 افراد کی ہلاکت کے بعد ہوئے ہیں۔
گارڈ آف آنر تصویر کے کاپی رائٹ Christian Hartmann / Reuters
Image caption دو فرانسیسی ریپبلکن گارڈز کرنل آرنو بیلٹریم کے تابوت کے سامنے کھڑے ہیں۔ کرنل بیلٹریم نے ایک یرغمال کے بدلے اپنی جان پیش کی تھی۔ فرانس کے صدر نے کہا کہ '44 سالہ افسر فرانسیسی مزاحمت کی روح کی علامت ہیں۔'
مقابلۂ رقص تصویر کے کاپی رائٹ Jane Barlow / PA
Image caption گلاسگو میں منعقدہ 48 ویں ورلڈ آئرش ڈانسنگ چیمپیئن شپ میں ایک ڈانسر کو رقص کرتے دیکھا جا سکتا ہے۔
شمالی کوریائی رہنما کم جونگ ان تصویر کے کاپی رائٹ KCNA / EPA
Image caption کئی دنوں کی قیاس آرائیوں کے بعد یہ تصدیق کر دی گئی کہ شمالی کوریا کے سربراہ کم جونگ ان نے بیجنگ کا دورہ کیا۔ انھوں نے یہ سفر ٹرین سے کیا اور یہ ان کا سنہ 2011 کے بعد کسی بھی ملک کا پہلا دورہ ہے۔
جلوس میں تائبین نے شرکت کی تصویر کے کاپی رائٹ Vincent West / Reuters
Image caption ایسٹر کے موقعے پر مقدس ہفتے کے دوران سپین بھر میں خوشیاں منائی گئیں۔ بلباؤ شہر میں 'پروسیشن ڈیل نزارینو' میں تائب افراد نے شرکت کی۔ اس میں تائب نصرانی 15 صدیوں سے رائج لباس پہنتے ہیں جس میں گناہگاروں کی شناخت کے بغیر انھیں توبہ کرنے کا ملتا ہے۔
مادام تساد میں نئی شاہی بالکونی کا منظر تصویر کے کاپی رائٹ Hannah McKay / Reuters
Image caption مادام تساد نے لندن میں نئی شاہی بالکونی کا منظر پیش کیا ہے جس میں برطانیہ کے شاہی خاندان کو دکھایا گيا ہے۔ اس میں ملکہ الزبتھ کے بائیں جانب شہزادہ چارلز اور ان کی اہلیہ کیمیلا کو دیکھا جا سکتا ہے جبکہ ڈیوک آف کیمبرج پرنس ولیم اور ڈچز آف کیمبرج کیتھرن کو دائیں جانب دیکھا جا سکتا ہے۔
صابن بنانے والے ملازم تصویر کے کاپی رائٹ Sedat Suna / EPA
Image caption ترکی کے شہر نزیب کے ایک کارخانے میں میں ملازم صابن اٹھائے ہوئے۔ اس میں کیمیائی مادوں کو ملانے کے علاوہ تمام کام ہاتھ سے ہوتے ہیں اور صابن پورے ملک میں بھیجا جاتا ہے۔
سرکاری بس میں ایک بچے کو دیکھا جا سکتا ہے تصویر کے کاپی رائٹ Youssef Badawi / EPA
Image caption شامی حکومت اور باغیوں کے درمیان انخلا کے معاہدے کے بعد ہزاروں شامی شہریوں کو مشرقی غوطہ سے بسوں کے ذریعے نکالا گیا ہے جبکہ ایک ماہ سے جاری تصادم میں سینکڑوں افراد ہلاک ہوئے ہیں۔ سرکاری بس کے اندر سے ایک بچہ باہر جھانک رہا ہے۔

۔