امریکہ میں مسافر طیارے کا دوران پرواز انجن ’پھٹ گیا‘، ایک مسافر ہلاک، سات زخمی

ساؤتھ ویسٹ تصویر کے کاپی رائٹ Reuters

امریکہ میں حکام کا کہنا ہے کہ ایک مسافر طیارے کا دوران پرواز ’انجن پھٹ جانے‘ کے نتیجے میں ایک مسافر ہلاک اور سات زخمی ہو گئے ہیں۔

ساؤتھ ویسٹ ایئر لائن کی فلائٹ 1380 نے فلاڈیلفیا میں اس وقت ہنگامی لینڈنگ کی جب دوران پرواز انجن پھٹ جانے کے بعد اس کے ایک پروں اور ایک کھڑکی کو نقصان پہنچا۔

یہ پرواز نیویارک سے ڈلاس جا رہی تھی اور اس پر 143 مسافروں کے علاوہ عملے کے پانچ ارکان سوار تھے۔

امریکی فیڈرل ایوی ایشن انتظامیہ نے حادثے کی تحقیقات کا آغاز کر دیا ہے۔

نیشنل ٹرانسپورٹ سیفٹی بورڈ این ٹی ایس بی کا کہنا ہے کہ وہ’ انجن کے خراب‘ ہونے کے نتیجے میں ایک ہلاکت کے بارے میں آگاہ ہیں جبکہ این ٹی ایس بی کے چیئرمین رابرٹ سموالٹ کا کہنا ہے کہ طیارے میں نصب ’ سی ایف ایم 56‘ انجن بڑے پیمانے پر کمرشل جہازوں میں استعمال ہو رہا ہے۔

فلاڈیلفیا کے فائر کمشنر ایڈم تھیل نے نیوز کانفرنس میں بتایا کہ معمول زخمی ہونے والے سات مسافروں کو موقع پر ابتدائی طبی امداد دی گئی لیکن انھیں ہسپتال منتقل نہیں کیا گیا۔

انھوں نے کہا ہے کہ مسافروں اور عملے نے مشکل ترین حالات میں بہت اعلیٰ کام کیا جبکہ لینڈ کرنے پر آگ بجھانے والے عملے نے جہاز کے انجن سے رسنے والے تیل اور آگ پر قابو پایا۔

طیارے میں سوار مسافر مارٹی مارٹینز نے مختصر فیس بک لائیو کیا اور ساتھ تحریر کیا کہ’ ہمارے جہاز کو کوئی خرابی پیش آئی ہے۔ لگ رہا ہے کہ ہم نیچے جا رہے ہیں اور ہنگامی لینڈنگ۔۔۔ ساؤتھ ویسٹ فلائٹ نیویارک سے ڈلاس۔‘

انھوں نے لینڈ کرنے کے بعد سی بی ایس نیوز کو بتایا کہ’ ایسے لگ رہا تھا کہ جہاز کنٹرول سے باہر ہو گیا ہے اور انھوں نے امدادی کارکنوں کو ایک زخمی خاتون کو جہاز سے باہر نکالتے دیکھا۔ وہاں ہر طرف خون تھا۔‘

’پہلے دھماکہ ہوا اور اس کے فوری بعد آکسیجن کے ماسک گر گئے اور تقریباً دس سیکنڈ کے وقفے سے انجن کھڑکی سے ٹکرایا اور اس کو توڑ ڈالا۔‘

اسی بارے میں