برطانوی شہزادی کیٹ مڈلٹن کے ہاں بیٹے کی ولادت

تصویر کے کاپی رائٹ EPA

کینسنگٹن پیلس نے خبر دی ہے کہ ڈچس آف کیمبرج شہزادی کیٹ مڈلٹن نے ایک بیٹے کو جنم دیا ہے۔ یہ ڈیوک آف کیمبرج شہزادہ ولیم اور ان کی اہلیہ کی تیسری اولاد ہے۔

کینسنگٹن پیلس کے مطابق بچے کا وزن آٹھ پاؤنڈ اور سات اونس ہے۔

کینسنگٹن پیلس کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ زچہ اور بچہ دونوں خیریت سے ہیں اور پیدائش کے وقت شہزادہ ولیم ان کے ساتھ موجود تھے۔

36 سالہ کیٹ مڈلٹن کا بچہ لندن کے سینٹ میری ہسپتال میں پیدا ہوا۔ کیٹ مڈلٹن 22 مارچ سے چھٹی پر ہیں اور شاہی ذمہ داریاں نہیں نبھا رہیں۔

یہ بھی پڑھیے

’کوئی بھی بادشاہ یا ملکہ بننا نہیں چاہتا‘

برطانیہ: شاہی محل کے اطراف میں سڑکیں بند

برطانیہ: شہزادی کیٹ مڈلٹن امید سے ہیں

یہ بچہ تخت نشینی کے لیے پانچویں نمبر پر ہے۔ اس فہرست میں سرِفہرست شہزادہ چارلز ہیں، ان کے بعد شہزادہ ولیم، پھر شہزادہ جارج اور پھر شہزادی شارلٹ اس بچے سے پہلے تخت نشینی کے حقدار ہوں گے۔

ڈیوک اور ڈچز کے ہاں پہلے سے دو بچے ہیں جن میں سے بیٹا جارج اب چار برس کا ہے جبکہ بیٹی شارلٹ دو سال کی ہیں۔

Image caption نومولود شہزادہ کب بادشاہ بنے گا؟

کیٹ مڈلٹن کو ہائپرمیسس گراویڈارم (ایچ جی) نام کی بیماری ہے جس سے انھیں دوران زچگی، پانی کی کمی ہونے کے ساتھ شدید متلی کی کیفیت مسلسل محسوس ہوتی ہے اور تھکن اور سر چکرانے کی بھی کیفیت 'معمول سے زیادہ' محسوس ہوتی ہے۔ اس سے قبل بھی اپنے پہلے دونوں بچوں کی ولادت میں بھی ڈچز آف کیمبرج اس بیماری سے متاثر ہوئی تھیں۔

متوقع پیدائش کا اعلان سونے کے فریم میں لگا کر بکنگھم پیلس کے احاطے میں رکھنے کی روایت کو بھی جاری رکھا جائے گا۔

بچے کے نام کے حوالے سے کافی قیاس آرائیاں کی جا رہی ہیں۔ ان میں آرتھر، ایلبرٹ، فریڈرک، جیمز اور فلپ شامل ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption یہ بچہ تخت نشینی کی فہرست میں پانچویں نمبر پر ہے

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں