ملائیشیا کے سابق وزیراعظم نجیب رزاق کی جائیدادوں پر چھاپے

تصویر کے کاپی رائٹ EPA

ملائیشیا کی پولیس کا کہنا ہے کہ انھوں نے سابق وزیراعظم نجیب رزاق سے منسلک جائیدادوں سے پرتعیش اشیا اور غیر ملکی کرنسی سے بھرے ہینڈ بیگز کے سینکڑوں ڈبے قبضے میں لیے ہیں۔

پولیس کا کہنا ہے کہ دارالحکومت کوالا لمپور میں جائیدادوں پر یہ چھاپے سٹیٹ ڈویلپمنٹ فنڈ ون ایم ڈی بی کیس کی تحقیقات کے سلسلے میں مارے جا رہے ہیں۔

سابق وزیراعظم نجیب رزاق کی عام انتخابات میں اپنے سابق اتحادی مہاتیر محمد کے ہاتھوں شکست کی ایک بڑی وجہ یہی ون ایم ڈی بی میں بدعنوانی کے الزامات بنے۔

ملائیشیا کے سابق وزیر اعظم کے ملک چھوڑنے پر پابندی

92 سالہ مہاتیر محمد نے وزیر اعظم کا حلف اٹھا لیا

ون ایم بی ڈی کیس: تین نادر فن پارے ضبط

نجیب رزاق پر مبینہ طور پر 70 کروڑ ڈالر کا گھپلہ کرنے کا الزام ہے، جس کی وہ تردید کرتے ہیں۔

انھیں ملائیشیا کے حکام نے تو بے قصور قرار دیا، لیکن کئی دیگر ممالک کی جانب سے ان کی تحقیقات کی جا رہی ہیں۔

پولیس کی جانب سے یہ چھاپے نجیب رزاق کے دفتر، نجی رہائیش گاہ اور کئی دیگر جائیدادوں پر میڈیا کی موجودگی میں مارے جا رہے ہیں۔

ایک موقع پر نجیب رزاق کے گھر سے نکالی جانے والی تجوری کو کھولنے کے لیے تالے بنانے والے کو بھی بلوایا گیا تھا۔

تصویر کے کاپی رائٹ EPA

جمعے کو کمرشل کرائم انویسٹیگیشن یونٹ کے سربراہ امر سنگھ نے صحافیوں کو بتایا کہ قبصے میں لی جانے والی اشیا میں ’ڈیزائنر ہینڈ بیگز کے 284 ڈبے‘ بھی شامل ہیں۔

’ہمارے اہلکار نے ان بیگوں کی تلاشی لی جن میں ملائیشیا کے علاوہ امریکی کرنسی بھی ملی ہے جن میں 72 بیگوں میں زیورات اور گھڑیاں موجود تھیں۔‘

خبر رساں ادارے روئٹرز نے پولیس سربراہ کے حوالے سے بتایا کہ ’زیوارت کی صحیح مالیت نہیں بتائی جا سکتی، کیونکہ ہم نے زیورات سے بھرے بیگ ضبط کیے ہیں اور زیورات کی مالیت تو بہت زیادہ ہو سکتی ہے۔‘

نجیب رزاق کے وکیل نے ان چھاپوں کو ’ناجائز طور پر ہراساں ‘ کرنا قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ قبضے میں لی گئی اشیا ’گراں قدر‘ ہیں۔

اسی بارے میں