’آزادی کا جو احساس غوطہ خوری میں ہوتا ہے اور کہیں نہیں ہوتا‘
اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

’آزادی کا جو احساس غوطہ خوری میں ہوتا ہے اور کہیں نہیں ہوتا‘

پہلی عرب خاتون غوطہ خور عالیہ حسین مصر کے جنوب مشرقی ساحلی علاقے میں رہتی ہیں جو دنیا بھر کے فری ڈائیورز کے لیے مکہ کی حیثیت رکھتا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ وہ پانی کے اندر رہنے کے اپنے ہی ریکارڈ توڑنے کی لگاتار کوششیں کرتی رہتی ہیں۔ ایسے آزاد غوطہ خور سانس لینے والے آلات کی مدد کے بغیر پانی کے اندر زیادہ دیر تک سانس روکے رکھنے کی مشق کرتے ہیں۔ ان میں سے کئی پانی کے انر پانچ منٹ تک رہنے کی اہلیت رکھتے ہیں۔