سٹرابری سے سوئیاں نکلنے پر شہریوں کو تنبیہ

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption صحت عامہ کے اہلکاروں نے صارفین کو پھل خریدتے ہوئے محتاط رہنے کی تلقید کی ہے۔ فائل فوٹو

آسٹریلیا میں شہریوں کو خبردار کیا گیا ہے کہ تازہ سٹرابری کھانے سے پہلے اسے کاٹ لیں۔ یہ تنبیہ متعدد افراد کی سٹرابری کھاتے ہوئے اس میں سے سوئی برآمد ہونے کے بعد کی گئی۔

یہ واقعات آسٹریلوی ریاست نیو ساؤتھ ویلز، کوینزلینڈ اور وکٹوریہ میں پیش آئے۔ ایک شخص کو ایسی سٹرابری جس میں سے سوئی برآمد ہوئی کھانے کے بعد ہسپتال لے جایا گیا۔ ایک نو برس کے بچے نے ایسی ہی سٹرابری کھائی مگر اسے نگلا نہیں۔ بازاروں سے متعدد برانڈ کی سٹرابری ہٹا دی گئی ہیں جن میں ڈونی بروک اور وولورتھ گروپ کے تحت بیری ابسیشن اور بیری لیشیس نامی برانڈ شامل ہیں۔

آسٹریلیا: جما ہوا انار کھانے سے خاتون ہلاک

صحت عامہ کے اہلکاروں نے صارفین کو پھل خریدتے ہوئے محتاط رہنے کی تلقین کی ہے۔ یہ تنبیہ فیسبک کے ایک صارف جوشوا گین کی پوسٹ منظر عام پر آنے کے بعد کی گئی جس میں اُنہوں نے اپنے دوست کے پیٹ میں شدید درد کے بارے میں تفصیلات بتائیں۔

کوئنزلینڈ میں صحت عامہ کے ادارے نے ٹوٹر پر ایک بیان میں کہا کہ صارفین سٹرابری کھانے سے پہلے اسے کاٹیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Queensland Health
Image caption سٹرابری کھانے سے پہلے اسے کاٹنے کی ہدایت۔

کاشت کاروں کی ایک تنظیم کوئنزلینڈ سٹرابری گروئرز ایسوسی ایشن کی جینیفر راؤلنگ نے اپنے بیان میں کہا کہ اُن کے خیال میں سٹرابری کو خراب کرنے کی کوشش کی گئی ہے۔ انہوں نے پھل خراب کرنے کے مسئلے کو دانستہ مگر اپنی نوعیت کا ایک انوکھا واقعہ قرار دیا۔

آسٹریلیا میں سٹرابری کی صنعت تقریباً نو کروڑ چالیس لاکھ امریکی ڈالر کی ہے اور خدشات ہیں کہ اس واقعے سے اس صنعت پر دور رس نتائج ہونگے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں