پلوامہ حملہ:’انڈیا کے قومی سلامتی مشیر کو حقیقت معلوم ہے‘

راج ٹھاکرے

انڈیا کی ہندو قوم پرست جماعت مہاراشٹرنو نرمان سینا کے سربراہ راج ٹھاکرے نے دعویٰ کیا ہے کہ اگر پلوامہ کے حملے کے بارے میں قومی سلامتی کے مشیراجیت ڈووال سے پوچھ گچھ کی جائے تو اس حملے کی پوری حقیقت عیاں ہو جائےگی۔

راج ٹھاکرے نے ہلاک ہونے والے انڈین سیکورٹی اہلکاروں کو 'سیاسی مظلوم' قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ ’ہر حکومت اس طرح کی صورتحال تخلیق کرتی ہے لیکن مودی کی حکومت میں یہ کچھ زیادہ ہی ہوتا ہے ۔‘

بی جے پی نے راج ٹھاکرے کے بیان کو مسترد کیا ہے۔ پارٹی ترجمان مادھو بھنڈاری نے کہا ہے کہ راج ٹھاکرے نے اپنی پوری زندگی دوسروں کی نقل میں گزاری اب وہ اجیت ڈووال کے خلاف الزامات لگا کر کانگریس رہنما راہل گاندھی کی نقل کر رہے ہیں۔

خبر رساں ایجنسی پی ٹی آئی کے مطابق راج ٹھاکرے نے مہارشٹر کے شہر کولہا پور میں کہا کہ پلوامہ کے حملے کے وقت وزیر اعظم نریندر مودی جم کاربٹ نیشنل پارک میں ایک فلم کی شوٹنگ کر رہے تھےاور حملے کی خبر کے بعد بھی شوٹنگ بدستور جاری رہی۔

یہ بھی پڑھیے

کانگریس: پلوامہ حملے کے بعد بھی مودی ’شوٹنگ کرتے رہے‘

انڈیا: پلوامہ حملے کا سیاسی فائدہ کس کو ہو گا؟

اوڑی سے پلوامہ حملے تک

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters

راج ٹھاکرے سخت گیر ہندو جماعت شیو سینا کے آنجہانی رہنما بالا صاحب ٹھاکرے کے بھتیجے ہیں۔ شیو سینا کے موجودہ سربراہ اور بالا صاحب کے بیٹے اودھو ٹھاکرے سے اختلاف کے بعد وہ شیو سینا سے الگ ہو گئے تھے اور مہا راشٹر نونرمان سینا یعنی ایم این ایس نام کی ایک پارٹی بنائی۔ نو نرمان سینانے ریاستی اسمبلی، لوک سبھا اور میونسپل کارپوریشن کے کئی انتخاب لڑے لیکن وہ کوئی جگہ نہیں بنا سکے۔

ایم این ایس بنیادی طور پر ممبئی تک محدود جماعت ہے جس کا بچا ہوا اثر بھی اب ختم ہو رہا ہے۔ وہ آنے والے پارلیمانی انتخابات میں بظاہرکانگریس کی طرف ہاتھ بڑھانے کی راہ دیکھ رہی ہے ۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ گزشتہ دنوں کانگریس نے بھی وزیر اعظم نریندر مودی پر تنقید کرتے ہوئے کہا تھا کہ وہ حملے کے بعد بھی نیشنل پارک میں شوٹنگ کرتے رہے۔ کانگریس نے یہ سوال بھی کیا تھا کہ پلوامہ کے حملے میں استعمال ہونے والا ڈھائی سو کلوگرام دھماکہ خیز آر ڈی ایکس جیش محمد کے فدائی کے پاس کہاں سے آیا؟ پارٹی نے یہ سوال بھی کیا تھاکہ انٹیلی جنس کی ناکامی کے لیے قومی سلامتی کے مشیر اس کی ذمے داری لیں گے یا نہیں؟

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں