کرائسٹ چرچ کی مساجد پر حملے اور عالمی غم و غصہ

کیا کرائسٹ چرچ کے انتقام میں گرجا گھر جلایا گیا؟

سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو وائرل ہوئی جس کے حوالے سے دعویٰ کیا گیا کہ نیوزی لینڈ میں مساجد پر حملے کے بعد پاکستان میں ایک چرچ کو نظر آتش کیا گیا ہے۔ کیا ایسا کچھ ہوا تھا؟

’حملہ آور شہرت چاہتا تھا، وہ بے نام رہے گا‘

نیوزی لینڈ کی وزیر اعظم جیسنڈا آرڈرن نے عہد کیا ہے کہ وہ کرائسٹ چرچ کی مساجد پر حملہ کرنے والے کا نام کبھی نہیں لیں گی، جبکہ آسٹریلیا کے وزیر اعظم نے بے لگام سوشل میڈیا کو ناقابل قبول قرار دیا ہے۔

’تارکینِ وطن کو اب بھی تھوڑا سا خوف ہے‘

نیوزی لینڈ کے شہر کرائسٹ چرچ میں ہونے والے دونوں حملوں کے متاثرین کا تعلق اردن، مصر، پاکستان، بنگلہ دیش، انڈونیشییا، متحدہ عرب امارات، افغانستان، شام، کویت اور انڈیا جیسے ممالک سے تھا۔

آخر کتنے مسلمان، ہندو، یہودی، کرسچن حیوان ہیں؟

خبر پھیلتے ہی ہر ایک نے سوچنا شروع کر دیا۔ میں اس وقت بحثیت انسان کیا کر سکتا ہوں؟ وسعت اللہ خان کا کالم

جاسنڈا آرڈرن: ’ہمدرد قیادت کی شبیہ‘

نیوزی لینڈ کے شہر کرائسٹ چرچ میں جمعے کے روز مساجد میں ہونے والے حملوں کے بعد وزیر اعظم آرڈرن نے متاثرہ خاندانوں کے ساتھ ملاقاتوں میں انتہائی ہمدردانہ رویہ اپنایا۔

یہ ’دہشت گردی‘ ہے یا ’قتلِ عام‘؟

نیوزی لینڈ کی وزیراعظم نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ کرائسٹ چرچ میں دو مساجد پر حملے 'دہشت گردی کے سوا کچھ نہیں'، لیکن سوشل میڈیا پر اکثر لوگ یہ پوچھ رہے ہیں کہ ’دہشت گردی‘ اور ’قتل عام‘ میں فرق کیوں رکھا جاتا ہے۔