خواتین کے ٹائلٹ میں ٹوٹتے بنتے رشتے

اینی، کوپر ہال، 2018 تصویر کے کاپی رائٹ Samantha Jagger
Image caption یہ تصاویر 35 ایم ایم کیمرے سے لی گئی ہیں

عام طور پر خیال کیا جاتا ہے کہ خواتین پبلک ٹائلٹ میں مردوں سے زیادہ ٹائم لیتی ہیں۔ اس کی ایک وجہ یہ ہے کہ ان کے لیے وہ صرف ٹائلٹ نہیں بلکہ وہاں میک اپ ٹھیک ہوتا ہے، گپ شپ لگتی ہے، دوستیاں بنتی ہیں اور زندگی کے مسائل کا تذکرہ ہوتا ہے۔

سمینتھا جیگر 10 برسوں سے خواتین کے ٹائلٹ میں دوستوں اور اجنبیوں کے درمیان گپ شپ کے ایسے ہی لمحات ریکارڈ کر رہی ہیں۔

انہوں نے یہ لمحات ایک 35 ایم ایم کے کیمرے میں بند کیے جو ان کے ہینڈ بیگ میں آرام سے آجاتا ہے۔

ان کی زیادہ تر تصاویر برطانیہ کے دو شہروں مانچسٹر اور لیڈز کے پبوں اور کلبوں میں لی گئی ہیں اور اب ایک نمائش کا موضوع بننے جا رہی ہیں جس کا ٹائٹل ہے ’لُوزن اپ‘ ( Loosen Up)

ڈینی، 2018 تصویر کے کاپی رائٹ Samantha Jagger
Image caption کچھ تصاویر تو دوستوں کی ہیں اور کچھ اجنبیوں کی جن سے سمینتھا کی پب یا کلب میں ہی ملاقات ہوئی
سن گلاسز تصویر کے کاپی رائٹ Samantha Jagger
ٹائلٹ کی دیوار کے اوپر سے گپ شپ تصویر کے کاپی رائٹ Samantha Jagger
Image caption تصاویر کا مقصد ٹائلٹ میں دوستی کے لمحات کو فلمبند کرنا تھا

25 سالہ سمینتھا نے بتایا کہ وہ نوجوانی سے تصاویر بنا رہی ہیں لیکن انہیں گزشتہ سال احساس ہوا کہ ان میں سے زیادہ تر تو ٹائلٹ میں لی گئی ہیں۔

وہ کہتی ہیں ’ان تصاویر نے مجھے ٹائلٹ میں لڑکیوں کے درمیان ہونے والی دوستی کے لمحات، ان کی گپ شپ، رشتوں کے ٹوٹنے کی باتوں، میک اپ اور تیاری کے بارے میں سوچنے پر مجبور کیا‘ اور انہیں یہ بہت دلچسپ لگا۔

’میں ان تصاویر میں اسی ماحول کو بیان کرنا چاہتی ہوں۔‘

سمینتھا تصویر کے کاپی رائٹ Samantha Jagger
Image caption ان میں سمینتھا کی اپنی تصاویر بھی شامل ہیں
Presentational white space
اینی، گیس لیمپ، مینچسٹر تصویر کے کاپی رائٹ Samantha Jagger
Image caption ان تصاویر میں اکثر خواتین میک اپ کر رہی ہیں اور اس میں ایک دوسرے کی مدد بھی کرتی نظر آ رہی ہیں
Presentational white space

پب اور کلبوں کے ٹائلٹ میں سمینتھا نے لڑکیوں کو ایک دوسرے کے کندھے پر آنسو بہاتے، لڑکیوں کو لڑکوں سے تعلق ختم ہونے پر ایک دوسرے کی ڈھارس بندھاتے، ہمدردی کی مسکراہٹ بانٹتے دیکھا ہے اور کوڑے دان میں زیر جامے بھی دیکھے ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ ایک بار وہ باہر نکلیں تو ٹائلٹ میں ایک لڑکی ہاتھ خشک کرنے والی مشین کی گرم ہوا اپنے چہرے پر لے رہی تھی اور اس کا خیال تھا کہ وہ اکیلی ہے اور سمینتھا کی آواز سن کر اس کی چیخ نکل گئی۔ سمینتھا نے کہا کہ وہ دونوں اس بات پر خوب ہنسی اور پھر ان میں دوستی بھی ہو گئی۔

ہیمبل اور چارلی، 2019 تصویر کے کاپی رائٹ Samantha Jagger
Image caption کچھ تصاویر میں اجنبی لڑکیاں مشکل صورتحال میں ایک دوسرے کی مدد کر رہی ہیں
کیرل اور فلو، میکی میئر تصویر کے کاپی رائٹ Samantha Jagger
Image caption نمائش میں کچھ خواتین کی باتیں سنی بھی جا سکیں گی

نمائشن کے دوران کچھ خواتین کی ٹائلٹ میں گزرے دلچسپ لمحات کے بارے میں باتیں بھی سنی جا سکیں گی۔ ان میں برمنگھم کی 25 سالہ چارلی ڈاؤنز بھی شامل ہیں۔

چارلی نے بتایا کہ وہ سمینتھا کی ایک دوست ہیمبل کے ساتھ تھیں جسے وہ دوسری بار ہی ملی تھیں۔ میں کچھ پی بھی چکی تھی اور پھر جیسا کہ لڑکیاں اکثر کرتی ہیں کہ اکٹھے ٹائلٹ جاتی ہیں، میں اور ہیمبل اکٹھے گئے تاکہ قے کرتے ہوئے وہ میرے بال چہرے سے پیچھے کر سکے۔

سمینتھا تصویر کے کاپی رائٹ Samantha Jagger
Image caption سمینتھا کی تصاویر میں دیکھی جانے والی اکثر لڑکیوں سے دوستی ہو چکی ہے
Presentational white space
بغل کی تصویر تصویر کے کاپی رائٹ Samantha Jagger
Image caption سمینتھا حقیقت دکھانا چاہتی ہیں نہ کہ صرف ایسی تصاویر جو انسٹا گرام کے لیے موزوں ہوں
Presentational white space

سمینتھا کا تعلق یارک سے ہے اور اب مانچسٹر میں رہتی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ’ایڈٹنگ اور فلٹر کے دور میں میں ایک لمحے کو قید کرتی ہوں اور بس وہیں رک جاتی ہوں۔

انہوں نے کہا کہ کچھ تصاویر ایس بھی ہیں جن کے بارے میں وہ اب بھی سوچ رہی ہیں کہ انہیں نمائش میں رکھا جائے یا نہیں۔

یس، مینچسٹر، 2019 تصویر کے کاپی رائٹ Samantha Jagger
Image caption ان کی کھیچنی ہوئی ہر تصویر نمائش کے لیے موزوں نہیں

’لوزن اپ‘ نمائش مانچسٹر میں ’دی برِک ورکس‘ بارٹن آرکیڈ بیسمنٹ میں مئی میں ہو گی۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں