’ہم جنس پرستی کی سزا موت، انکا بائیکاٹ کریں‘

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption اداکار جارج کلونی

ہالی وڈ اداکار جارج کلونی نے برونائی کی طرف سے اس اعلان کے بعد کے وہاں ہم جنس پرستی 'بدکاری' کی سزا موت ہو گی، اس ملک سے تعلق رکھنے والے نو ہوٹلوں کے بائیکاٹ کا مطالبہ کیا ہے۔

انڈین سپریم کورٹ کا ہم جنس پرستی کے حق میں فیصلہ

تنزانیہ: ہم جنس پرستی کے الزام میں 20 افراد گرفتار

افغانستان ہم جنس پرستوں کی خفیہ زندگی

جنوب مشرقی ایشیا کے ملک برونائی میں تین اپریل کے بعد سے ہم جنس پرستوں کو کوڑوں یا سنگساری کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

سن 2014 میں برونئی 'اسلامی قوانین' نافذ کرنے والا مشرق بعید کا پہلا ملک بن گیا تھا۔ ان قوانین کے نفاذ کی وہاں مخالفت بھی کی گئی تھی۔ جارج کلونی کا کہنا ہے کہ برونئی کے نئے قوانین انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہیں۔

انہوں نے ویب سائیٹ 'ڈیڈلائن' میں ایک مضمون میں لکھا کہ 'ایسی خبروں کے طوفان میں جن میں دنیا مطلق العنانیت کی طرف بڑھ رہی ہے یہ خبر انوکھی ہے۔'

انھوں نے کہا کہ برونئی ایک بادشاہت ہے اور بائیکاٹ کا اس پر زیادہ اثر نہیں پڑے گا لیکن پھر بھی انسانی حقوق کی ان خلاف ورزیوں میں ہم حصہ نہیں ڈالیں گے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption جارج کلونی نے برونئی کے ہوٹلوں کا بائئکاٹ کرنے کا فیصلہ کیا ہے

انھوں نے کہا کہ امریکہ، برطانیہ، اٹلی اور فرانس میں ڈورچسٹر ہوٹلوں کا بائیکاٹ ہونا چاہیے، جو برونئی سرمایہ کاری ایجنسی کی ملکیت ہیں۔

جزیرہ بورنیو پر واقع برونئی تیل اور گیس کی دولت سے مالا مال ہے۔

متعلقہ عنوانات