میکسیکو سٹی: ’مافیا کے حکم پر’ دو اسرائیلی شہریوں کا ریستوران میں قتل

اسرائیل، میکسیکو تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption اسرائیلی سفارتخانے کا کہنا ہے کہ ہلاک ہونے والے دونوں شخص اسرائیل اور میکسیکو میں مجرمانہ ریکارڈ کے حامل تھے۔

میکسیکو سٹی کے ایک پوش علاقے میں ایک شاپنگ مال کے ریستوران میں بیٹھی ایک خاتون اچانک اٹھی اور اپنی قریبی میز پر بیٹھے دو افراد پر فائرنگ کر دی۔

ایک شخص کی موت موقع پر ہی واقع ہوگئی جبکہ دوسرے کو ہسپتال لے جایا گیا جہاں وہ جانبر نہ ہو سکے۔

ریستوران کے دیگر گاہکوں میں افراتفری مچ گئی اور وہ چلاتے ہوئے خود کو بچانے کے لیے اپنی اپنی میزوں کے نیچے چھپ گئے۔

یہ ہلاکتیں گزشتہ بدھ کی دوپہر کو میکسیکو سٹی کے جنوبی حصے میں واقع پلازا آرٹز شاپنگ سینٹر میں ہوئیں۔

یہ بھی پڑھیے

میکسیکو کو انڈین ’بچوں‘ کی تلاش

میکسیکو:منشیات فروشوں کے ساتھ گزرے آٹھ ماہ کی کہانی

میکسیکو میں ’مردہ لوگوں کا دن‘

دونوں ہی افراد اسرائیلی شہری تھے اور ان کے ملک کے سفارتخانے کی جانب سے ان کی شناخت 41 سالہ ایلون ایزولے اور 44 سالہ بنجامن یشورون سوچی کے نام سے کی گئی ہے۔

ایسپیرانزا کے نام سے شناخت کی جانے والی خاتون موقع سے فرار ہوگئی، اور مال کے باہر جا کر اپنے کپڑے تبدیل کر کے سنہری بالوں کی وِگ لگا لی۔

تصویر کے کاپی رائٹ PGJCDMX
Image caption ایسپیرانزا کے نام سے شناخت کی جانے والی خاتون موقع سے فرار ہوگئی، اور مال کے باہر جا کر اپنے کپڑے تبدیل کر کے سنہری بالوں کی وِگ لگا لی۔

جرم سے متعلق دو ویڈیوز فوراً ہی سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئیں۔ ان میں سے ایک میں یہ دیکھا جا سکتا ہے کہ مبینہ قاتل کے فرار میں پہلے ایک پولیس اہلکار اور پھر گشت پر موجود پولیس کی گاڑی نے رکاوٹ ڈالی۔

دوسری ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ کس طرح دو اسلحہ بردار شخص شاپنگ مال کے باہر ایک پولیس اہلکار کو دھمکاتے ہیں اور دوسرے کو گولی مار دیتے ہیں۔ پولیس اہلکار کی گردن اور کندھے پر زخم آتے ہیں۔

حکام نے تصدیق نہیں کی ہے کہ آیا ایک ہی وقت میں ایک ہی شاپنگ سینٹر میں ہونے والے فائرنگ کے ان دونوں واقعات کا آپس میں کوئی تعلق ہے اور یہ واضح نہیں کہ اس خاتون کے ساتھ حملے میں دیگر کتنے افراد نے حصہ لیا تھا۔

'اسرائیلی مافیا کے ساتھ تعلق'

اپنے ابتدائی بیانات میں 33 سالہ خاتون نے کہا کہ وہ ان میں سے ایک شخص سے فیس بک پر ملی تھیں اور انھوں نے اس شخص سے بے وفائی کا بدلہ لینے کے لیے یہ جرم کیا۔

مگر میکسیکو سٹی کے پراسیکیوٹر کے ترجمان اولیسز لارا نے جمعرات کو صحافیوں کو بتایا کہ 'قتل کی جذباتی وجوہات کو خارج از امکان قرار دیا گیا ہے۔'

'گزشتہ روز کے واقعات سے ہم اس نتیجے پر پہنچے ہیں کہ یہ مجرم گروہوں کے درمیان حساب برابر کرنے کا واقعہ ہے۔'

انھوں نے کہا کہ 'ہوسکتا ہے کہ اس [قتل] کا انتظام اسرائیلی مافیا کے ساتھ مل کر کیا گیا ہو۔'

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption قتل کے وقت شاپنگ سینٹر کے باہر ایک پولیس اہلکار پر بھی فائرنگ کی گئی۔

میکسیکو میں اسرائیل کے سفارتخانے نے کہا ہے کہ دونوں افراد کا اسرائیل اور میکسیکو میں مجرمانہ ریکارڈ ہے جبکہ اسرائیل کے مقامی میڈیا نے دعویٰ کیا ہے کہ سوچی اسرائیل کے جرائم پیشہ حلقوں میں بدنام تھے۔

پولیس ذرائع نے ایک اسرائیلی ویب سائٹ کو بتایا ہے کہ اس میں کوئی شک نہیں کہ یہ ایک اور اسرائیلی شخص کے حکم پر ہونے والا 'قتل' تھا۔

پولیس منشیات کی سمگلنگ، ہتھیاروں کی فروخت اور منی لانڈرنگ سے اس جرم کے ممکنہ تعلق کی تفتیش کر رہی ہے اور ان کے مطابق ہو سکتا ہے کہ یہ خاتون کم از کم تین دیگر ساتھیوں کے ساتھ مل کر کام کر رہی تھیں۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں