عیدِ قربان پر قربانی کے جانور

تصویر کے کاپی رائٹ ARIF ALI
Image caption پاکستان میں اونٹ کی قربانی کو خاص مقام حاصل ہے

عیدالضحیٰ مسلم کلینڈر کے آخری مہینے کی 10 ذی الحج کو منائی جاتی ہے۔ اس عید پر جانوروں کی قربانی دی جاتی ہے جس کی وجہ سے اسے عید قرباں کہا جاتا ہے۔ حُجاج قربانی کرنے کے بعد حج کے لیے پہنا گیا خصوصی لباس، احرام، اتار دیتے ہیں۔

قربانی کا گوشت تین حصوں میں بانٹا جاتا ہے، جس میں سے ایک حصہ اپنے لیے، دوسرا رشتہ داروں کے لیے اور تیسرا غریبوں کے لیے ہوتا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption ترکی کے ساحلی شہر اناطولیہ میں عید قرباں کے مناظر

قربانی کے جانور کے لیے ضروری ہے کہ وہ ہر قسم کے جسمانی نقص سے پاک ہو۔ یہی وجہ ہے کہ ہر کوئی تلاش میں ہوتا ہے صحت مند اور خوبصورت بکرے، بھیڑ، دمبے، اونٹ یا بیل کے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Anadolu Agency
Image caption اناطولیہ میں گرمیوں کی چھٹیاں منانے ہر سال سیاحوں کی بڑی تعداد ترکی کی اس ساحلی پٹی کا رخ کرتی ہے

مالی استطاعت رکھنے والا ہر مسلمان اپنی طرف سے قربانی کر سکتا ہے۔ اور ایسے عید پر ایسے افراد اپنی پسند کے جانور خریدنے کے لیے مویشی منڈیوں کا رخ کرتے نظر آتے ہیں اور پھر اکثر واپسی قربانی کے اپنے پسندیدہ جانور کے ساتھ ہوتی ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption پاکستان میں عید قرباں پر مصروفیات

کچھ لوگ موٹر سائیکل پر بھی تیسری سواری کی گنجائش نکال لیتے ہیں۔ اگر موٹر سائیکل چھوٹا پڑ جائے تو ایسے میں اس کے پیچھے مزید ایک ریل کی طرح کا اضافی ڈبہ لگا دیا جاتا ہے جس میں بڑے جانور بھی لائے جاسکتے ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption پاکستان میں بڑے جانور گھر تک لانا جوئے شیر لانے کے مترادف ہے

بڑے جانور کی قربانی میں سات افراد حصہ لے سکتے ہیں جبکہ چھوٹے جانور کی قربانی ہر شخص کو الگ الگ کرنی پڑتی ہے۔ تاہم ایسے اجتماعی قربانی کی رسم ایسی ہے کہ جس میں اب بکرے کی قربانی میں بھی حصہ مل جاتا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption پاکستان میں قربانی کے لیے میدانی اور پہاڑی بکروں کی تفریق بھی کی جاتی ہے

قربانی کے اہل جانور کا پتا اس کے دانت دیکھ کر بھی لگایا جاتا ہے۔ اگر اس کے دو بڑے دانت ہوں تو پھر اسے قربانی کے قابل سمجھا جاتا ہے ایسے جانور ’دوندا‘ بھی کہا جاتا ہے یعنی دو دانتوں والا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption بلاروس میں بقر عید پر قربانی کی تیاریاں کی جا رہی ہیں

جانور کو ذبح کرتے وقت اس بات کا خیال رکھنا ضروری ہے کہ اسے کم سے کم اذیت پہنچے۔ عید پر جانور زیادہ ہونے کی وجہ سے جانور کو زبح کرنے میں مہارت رکھنے والوں کی طلب میں اضافہ ہوجاتا ہے۔ قربانی کے جانور کو زبح کرنے سے پہلے خوب کھلایا پلایا اور گھومایا پھرایا جاتا ہے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں