روس کے صدر ولادیمیر پوتن کا ’بیٹیوں‘ سے متعلق سوالات کے جواب سے گریز

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

روس کے صدر ولادیمیر پوتن نے سال کے اختتام پر براہ راست نشر کی جانے والی پریس کانفرنس میں اپنی دو بیٹیوں کی مبینہ شناخت کے بارے میں پوچھے گئے سوالات کا جواب دینے سے گریز کیا۔

یہ پریس کانفرنس تمام اہم ریاستی ٹی وی چینلز پر براہ راست نشر کی جا رہی تھی۔

اس پریس کانفرنس میں جب ان سے پوچھا گیا کہ وہ کب ان اطلاعات کی تصدیق کریں گے کہ ان کی دو بیٹیاں جن کی پہچان اور ان کے پیشہ کے بارے میں سرکاری طور پر کچھ نہیں کہا گیا اصل میں یکاترینا تیکونوا (جنہیں کترینا تیکونوا بھی کہا جاتا ہے) اور ماریا ورونٹسوا ہیں لیکن صدر پوتن نے اس بارے میں کچھ نہیں کہا۔

تیکونوا اور ورونٹسوا دونوں کو روسی ٹی وی پر مختلف مواقعوں پر روس کے ریاستی ٹی وی پر دکھایا جاتا رہا ہے لیکن صرف ان کی پیشہ وارانہ حیثیت اور بڑے کاروباری اداروں سے تعلق کی بنا پر تاہم کبھی ان کے خاندانی تعلقات کا کوئی تذکرہ نہیں کیا گیا۔

ولادیمیر پوتن کے بارے میں مزید پڑھیہ

ولادیمیر پوتن: 20 سال 20 تصویریں

سعودی عرب اور روس کی بڑھتی قربت، ہو کیا رہا ہے؟

ترکی یا شام: روسی صدر پوتن کس کا ساتھ دے رہے ہیں؟

پوتن ایران پر الزام تراشی سے کترا رہے ہیں؟

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

پوتن نے بی بی سی روسی سروس کے ایک نامہ نگار کے سوال پر کہا کہ ’آپ نے ایک کاروباری معاملے کے بارے میں بات کی۔ آپ نے ایک خاتون کا ذکر پھر دوسری خاتون کا ذکر کیا۔ آپ نے غالباً سب کچھ نہیں بتایا۔ آپ نے ان کے ذاتی شیئرز کا ذکر کیا۔ آپ نے ان کے کاروبار کی وسعت کی بات کی۔ آپ نے سب کچھ نہیں کہا، آپ نے تو صرف کچھ حقائق بیان کیے جو کہ کافی نہیں ہیں‘۔

انھوں نے کہا ’ان کے کاروبار کے بارے میں مزید معلومات حاصل کریں آپ کو معلوم ہو جائے گا کہ ان کا کاروبار کیا ہے، اگر کوئی ہے بھی کہ نہیں، اس کا تعلق کس سے ہے اور کون مدد کر رہا ہے۔‘

پوتن نے تیکونوا کی کمپنی انوپرکتیکا کا ذکر کیا جس نے سنہ 2018 میں بڑا منافع ظاہر کیا تھا۔

پوتن نے کہا کہ یہ ’کاوش‘ ماسکو سٹیٹ یونیورسٹی کے سربراہ کی ہے ’جس کے پیچھے قطعی طور پر قانون اور درست خواہش کار فرما ہے، ہمارے اعلی تعلیمی اداروں کی کہ با صلاحیت لوگوں اور سائنس اور تعلیم سے اپنے صنعت کاروں کی کاروباری ضروریات کو پورا کیا جائے‘۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں