سائبیریا میں منفی 20 ڈگری میں ایک ڈبے سے ملنے والی نوزائیدہ بچی

بچی

،تصویر کا ذریعہZDRAV.NSO.RU

،تصویر کا کیپشن

شدید سردی میں بچی انڈوں کے ڈبے سے برآمد ہوئی

روسی حکام کے مطابق سائبیریا میں منفی 20 ڈگری سینٹی گریڈ میں تنہا چھوڑی جانے والی لاوارث بچی کی حالت اب بہتر ہے۔

مقامی رپورٹوں کے مطابق یہ نوزائیدہ بچی جمعہ کے روز پانچ نوعمر بچوں کو سوسنوکا نامی گاؤں کے قریب ایک سڑک پر انڈوں کے ڈبے میں ملی۔

بچی کو ان لڑکوں میں سے ایک کے والدین ہسپتال لے گئے جہاں ڈاکٹروں نے اس بچی کو صحیح سلامت اور تندرست قرار دیا۔

پولیس بچی کی ماں کی تلاش میں ہے اور اس نے اقدامِ قتل کے الزام کے تحت تفتیش شروع کر دی ہے۔

جس لڑکے کو بچی ملی تھی اس کے والدین بچی کو گود لینا چاہتے ہیں لیکن انھیں اس وقت انتظار کرنا ہوگا کہ جب تک اس بچی کے رشتہ داروں کے بارے میں کچھ معلوم نہیں ہو جاتا۔

روسی اخبار این جی ایس سے بات کرتے ہوئے بچی کو گود لینے کے خواہشمند دمتری لیٹوینوف نے کہا کہ ان کے بیٹے سمیت پانچوں دوست آرتھو ڈوکس کرسمس کے دن سیر کے لیے باہر گئے تھے ۔

،تصویر کا ذریعہTHE SIBERIAN TIMES

،تصویر کا کیپشن

دمتری لیٹوینوف (بائیں) اور انکی بیوی انا (دائیں) بچی کو گود لینا چاہتے ہیں

مواد پر جائیں
پوڈکاسٹ
ڈرامہ کوئین

’ڈرامہ کوئین‘ پوڈکاسٹ میں سنیے وہ باتیں جنہیں کسی کے ساتھ بانٹنے نہیں دیا جاتا

قسطیں

مواد پر جائیں

انھوں نے مزید بتایا کہ 'اس رات کافی اندھیرا تھا انھوں نے اپنے فون کی روشنی جلا کر دیکھا کہ باکس میں کیا ہے۔'

’معلوم ہوا کہ بکسے کے اندر ایک بچی تھی جس کے پاس چھوٹا سا کمبل اور ایک بوتل تھی‘۔

انکے بیٹے رینات نے اپنی ماں کو فون کر کے وہاں بلایا اور وہ لوگ بچی کو شہر کے ہسپتال لیےگئے۔

خدشہ یہ تھا کہ بچی کو ٹھنڈ لگ گئی ہو گی اور وہ زندہ نہیں رہے گی۔ خیال کیا جاتا ہے کہ جب وہ ملی تھی تو تقریباً تین دن کی تھی۔

مقامی محکمہ صحت کے ایک بیان میں گیا ہے کہ ہسپتال پہنچنے پر، ایک ڈاکٹر نے جلدی سے بچی کا معائنہ کیا اور اس کے بازوؤں اور ٹانگوں کو آہستہ آہستہ مساج کر کے اسے گرم کیا گیا ۔

بچی ٹھیک ہے اب اسے بچوں کے ہسپتال منتقل کر دیا گیا جہاں اب اس کی دیکھ بھال کی جا رہی ہے۔

روسی اخبار این جی ایس سے بات کرتے ہوئے لیٹوینووا نے کہا کہ ہسپتال کا عملہ اور وہ یہ خبر سننے کے بعد روپڑے کہ بچی ٹھیک ہے۔

یہ جوڑا جن کے پہلے ہی تین بیٹے ہیں اب بچی کو گود لینا چاہتے ہیں۔

اخبار کے مطابق اگر بچی کے رشتہ دار نہیں ملتے تو نئے والدین کو گود لینے سے پہلے درخواست دینی پڑے گی اور خصوصی کورس بھی کرنے پڑیں گے۔