فرانس میں انٹرنیٹ بل مسترد

Image caption موسیقی کی صنعت سخت قوانین کا مطالبہ کر رہی ہے

فرانسیسی پارلیمان نے اس بل کو مسترد کردیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ کوئی بھی شخص انٹرنیٹ سے تین مرتبہ غیر قانونی طور پر موسیقی ڈاؤن لوڈ کرتے ہوئے پکڑا جائے تو اس کا انٹرنیٹ بند کردینا چاہیے۔

اگرچہ یہ بل سینیٹ نے منظور کردیا تھا لیکن قومی اسمبلی نے اس کو مسترد کر دیا۔ وزراء کا کہنا ہے کہ بل میں ترامیم کر کے آئندہ ہفتے یہ بل پارلیمان میں پیش کیا جائے گا۔

اس بل کو فرانسیسی صدرکی حمایت حاصل ہے اور یہ بل اگر منظور ہو جاتا تو انٹرنیٹ پائریسی کے خلاف پہلی بار اتنا سخت قانون لاگو ہوتا۔ موسیقی کی صنعت اس سلسلے میں مزید سخت قوانین کا مطالبہ کر رہی ہے۔

مسترد شدہ بل کے تحت پہلی بار غیر قانونی طور پر موسیقی ڈاؤن لوڈ کرتے ہوئے پکڑے جانے پر ایک ای میل کی جاتی، دوسری بار پر ایک خط اور تیسری بار پکڑے جانے پر ایک سال کے لیے انٹرنیٹ منقطع کردیا جاتا۔ اس بل کو فلم اور موسیقی کی صنعتوں کی حمایت حاصل تھی۔

تاہم چند صارفین کے حقوق کی تنظیموں کا کہنا ہے کہ اس قانون سے ہو سکتا ہے کہ غلط لوگوں کو سزا ملے اگر ان کی شناخت غلط لوگوں کے ہاتھ لگ جائے۔ اس کے علاوہ ان کا کہنا ہے کہ یہ نگرانی ریاستی نگرانی کے مترادف ہے۔

اسی بارے میں