مسجد میں فائرنگ، پاکستانی ہلاک

صومالیہ(فائل فوٹو)
Image caption صومالیہ اسلامی مزاحمت کاروں اور حکومتی فوجوں کے درمیان لڑائی کا شکار ہے

صومالیہ کے نیم خود مختار علاقے پنٹ لینڈ میں نامعلوم مسلح افراد نے ایک مسجد میں موجود پانچ پاکستانیوں کو ہلاک کر دیا ہے۔

عینی شاہدوں کا کہنا ہے کہ جالكعيو کے قصبے میں چند نقاب پوش مسجد میں داخل ہوئے اور انہوں نے چھ پاکستانیوں اور ایک صومالی کو باہر آنے کا حکم دیا اور پھر ان پر گولیاں برسا دیں۔

حملے میں بچ جانے والے دو افراد شدید زخمی ہیں۔

فوری طور پر یہ واضح نہیں ہو سکا کہ ان لوگوں کو کیوں ہلاک کیا گیا۔ تاہم گزشتہ ہفتے ملک کے وزیر اطلاعات کے قتل کے بعد سے علاقے میں شدید کشیدگی پائی جاتی ہے۔

اطلاعات کے مطابق ہلاک ہونے والوں کا تعلق پاکستان کی ایک تبلیغی جماعت سے ہے جو منگل کو وہاں پہنچے تھے۔ نامہ نگاروں کا کہنا ہے کہ غیر ملکی مبلغوں کا تبلیغ کے لیے صومالیہ آنا معمول کی بات ہے۔

اس سے پہلے بھی سن دو ہزار آٹھ میں صومالیہ کے دارالحکومت موگادیشو میں حکومتی فوجی اور اسلامی مزاحمت کاروں کے درمیان لڑائی کے دوران اسی تبلیغی جماعت کے چھ رہنما ہلاک ہو گئے تھے۔

صومالیہ اس وقت اسلامی مزاحمت کاروں اور حکومتی فوجوں کے درمیان حصول اقتدار کے لیے لڑائی کا شکار ہے۔

اسی بارے میں