ہیٹی کی آبادکاری کے لیے اربوں کے وعدے

بین الاقومی برادری نے ہیٹی کے زلزلہ متاثرین کے لیے فوری طور پر 9.9 بلئین ڈالر کی مالی مدد فراہم کرنے کا وعدہ کیا ہے۔

زلزلہ متاثرین
Image caption بارہ جنوری کو ہیٹی میں زبردست زلزلہ آیا تھا جس ميں دو لاکھ افراد ہلاک ہو گئے بھے جب کہ لاکھو بے گھر ہو گئے تھے۔

اب تک سب سے زيادہ مالی مدد کا اعلان امریکہ اور یورپی یونین کی جانب سے کیا گیا ہے۔

نویارک میں اقوام متحدہ کے زیر اہتمام اس ڈونر اجلاس میں ایک سو تیس سے زیادہ ممالک اور دنیا کے اہم مالی اداروں نےشرکت کی۔

امریکہ کی وزیر خارجہ ہلری کلنٹن نے 1.15 بلین ڈالر کی مالی مدد فراہم کا اعلان کیا۔

جبکہ ہیٹی کے بنیادی ڈھانچے کو دوبارہ تعمیر کرنے کے لیے یورپی یونین نے 1.7 بلین ڈالر کی اضافی مالی مدد دینے کا وعدہ کیا۔

بین الاقوامی مالی مدد کا استعمال ہسپتالوں ، سکول اور سرکاری عمارتوں کی تعمیرات ، ملازمات کے مواقع پیدا کرنے اور ہیٹی کی کاشتکاری کی اہم صنعت میں اصلاحات کے لیے کیا جائے گا۔

اجلاس کی سربراہی اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل بان کی مون کر رہے تھے۔ اس موقع پر انہوں نے بتایا کہ اقوام متحدہ کے انٹرنیٹ کے نظام کے ذریعے امدادی فنڈز کے درست استعمال اور شفافیت پر نظر رکھی جائےگی۔

بارہ جنوری کو ہیٹی میں زبردست زلزلہ آیا تھا جس ميں دو لاکھ سےزیادہ افراد ہلاک اور لاکھوں بےگھر ہو گئے تھے۔