جنوبی افریقہ، نسل پرست رہنما کا قتل

جنوبی افریقہ میں سفید فام بائیں بازو کے رہنما یوجین ٹیئر بلانچ کو ملک کے شمال مغربی حصہ میں واقع ان کے فارم پر قتل کر دیا گیا ہے۔

انہوں نے سنہ اسی کی دہائی میں نسلی امتیاز کے نظام کو قائم رکھنے کے لیے ایک جماعت بھی بنائی تھی

فرانسیسی زبان میں ٹیئر بلانچ کے معنی ’سفید زمین‘ کے ہیں جو یوجین ٹیئر بلانچ کے آباؤ اجداد جن کا تعلق فرانسیسی پروٹسٹنٹ فرقے سے تھا کے سیاسی رہنماؤں کی زبان تھی۔

انہتر سالہ یوجین ٹیئر بلانچ نے سنہ انیس سو اسی کے آغاز میں ایک جماعت بنائی۔ جس کا مقصد اقلیت کے نظام کو باقی رکھنا تھا۔

اُس وقت کی پی ڈبلیو حکومت جنوبی افریقہ کی اقلیتوں کو ووٹ کا حق دینے کے لیے ایک آئینی منصوبہ بنا رہی تھی۔

ٹیئر بلانچ کے نزدیک یہ منصوبہ کالے قانون، کمیونزیم اور جنوبی افریقہ کی تباہی پر مشتمل تھا۔

یوجین ٹیئر بلانچ کو سنہ اسی کی دہائی میں اُس وقت شہرت حاصل ہوئی جب انہوں نے جنوبی افریقہ میں مختصر سی سفید فام اقلیت کے قائم کردہ نسلی امتیاز کے نظام کو باقی رکھنے کے لیے ایک جماعت بنائی۔

انہوں نے سنہ اسی کی دہائی کے آخر اور نوے کے آغاز میں اس مقصد کے لیے دہشت گردی کا بھی سہارا لیا۔

اسی بارے میں