یونان کو تیس ارب کی پیشکش

یورپی اتحاد کے سولہ ممالک کے سربراہان نے کہا ہے کہ اگر یونان چاہے تو وہ اس کی خستہ اقتصادی حالت کے پیش نظر اسے تیس ارب یورو ہنگامی حالت کے قرض کے طور پر دینے پر تیار ہیں۔

قرض کی رقم کی قیمت آئی ایم ایف کے فارمولے کے تحت تقریباً پانچ فیصد مقرر ہو گی۔

لگزمبرگ کے وزیر اعظم یان کلاڈ ینکر نے یورپی اتحاد کے ممالک کے وزرائے خزانہ کی طرف سے اعلان کیا ہے کہ قرضے کی رقم یونان کی حکومت کی طرف سے اسے قبول کرنے کے فیصلے کے بعد جاری کی جائے گی۔

یورپی ممالک سے قرضہ لینے کی صورت میں یونان کو اقتصادی منڈی میں مالی وسائل تلاش کرنے کی ضرورت نہیں رہے گی۔

یونان کا کل قرضہ تین سو ارب یورو ہے اور اسے اپنی ادائیگیوں کے لیے اگلے مہینے تک ساڑھے گیارہ ارب یورو حاصل کرنے ہیں۔

یونان کو دیئے جانے والے قرضے کی شرحِ سود کا فیصلہ یونان کی طرف سے امداد کی باقاعدہ درخواست ملنے کے بعد کیا جائے گا۔

یونان کا موقف رہا ہے کہ وہ امداد کے لیے یورو زون میں اپنے اتحادیوں اور آئی ایم ایف سے مدد نہیں مانگے گا لیکن سرمایہ کاروں کا کہنا ہے کہ یونان کے لیے صورتحال بہت مشکل ہے۔

اسی بارے میں