چین زلزلہ: ہلاکتیں گیارہ سو سے زیادہ

چین کے مغربی صوبے چِنگھائی میں بدھ کوآنے والے زلزلے میں ہلاک ہونے والوں کی تعداد بڑھ کر 1144 ہو گئی ہے۔

چین میں زلزلہ
Image caption ہزاروں افراد بے گھر ہو چکے ہیں اور کئی ایک سخت سرد میں کھلے اسمان تلے راتیں گزارنے پر مجبور ہیں

چینی خبر رساں ایجنسی زینوا کے مطابق 417 افراد ابھی تک لاپتہ ہیں اور زخمیوں کی تعداد بارہ ہزار کے لگ بھگ ہے۔

ہزاروں افراد بے گھر ہو چکے ہیں اور شدید سردی میں کئی ایک کو کھلے آسمان تلے راتیں گزارنا پڑ رہی ہیں۔

وزیرِ اعظم وین جیاباؤ نے علاقے کی ازسرِ نو تعمیر کے لیے ہر ممکن مدد کا وعدہ کیا ہے۔

جمعہ سے امدادی کاموں کے لیے بھاری مشینری وہاں پہنچنا شروع ہو گئی تھی۔ خوراک، خیمے، اور طبی امداد کا سامان بھی اب وہاں پہنچ رہا ہے۔ تاہم امدادی کارکنوں کا کہنا ہے کہ مزید سامان کی اشد ضرورت ہے۔

ایک اندازے کے مطابق صرف یوشو کاؤنٹی میں پندرہ ہزار گھر تباہ ہو گئے ہیں جس کی وجہ سے ہزاروں افردا بےگھر ہیں اور زخمی امداد کے منتظر ہیں۔

فوجی، عام شہری امدادی کارکن اور بدھ راہب کلہاڑیوں اور بیلچوں کی مدد سے ملبے تلے دبے افراد کو نکالنے کی کوشش کر رہے ہیں۔

یوشو کاؤنٹی سکول کے ایک استاد کا کہنا ہے کہ وہ اور سکول کے سٹاف کے دیگر لوگ خالی ہاتھوں سے سکول کے ملبے کے نیچے سے طالب علموں کو نکالنے کی کوشش کرتے رہے ہیں۔

Image caption متاثرین کو امداد کی اشد ضرورت ہے

چین کا یہ صوبہ نیپال کی سرحد سے زیادہ دور واقع نہیں ہے۔ اطلاعات کے مطابق بدھ کی صبح آنے والے اس زلزلے میں ہلاک ہونے والوں کی تعداد اس سے زیادہ بھی ہو سکتی ہے۔ ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کے لیے چینی فضائیہ نے ضروری سامان اور افرادی کمک روانہ کی ہے۔

یوشو تیرہ ہزار فٹ کی بلندی پر واقع ہے اور اسی وجہ سے امدادی کاموں میں دشواری پیش آ رہی ہے کیونکہ امدادی ٹیمیں اتنی بلندی پر کام کرنے کی عادی نہیں ہیں۔ اس کے علاوہ بڑا مسئلہ زلزلے کے بعد مستقل آنے والے جھٹکے ہیں۔

حکام کے مطابق زلزلہ صرف دس کلومیٹر کی گہرائی میں آیا اور صوبائی دارالحکومت زننگ سے پانچ سو میل کے فاصلے پر واقع یوشو ضلع اس سے سب سے زیادہ متاثر ہوا۔

حکام کا کہنا ہے کہ ہلاکتوں کی تعداد میں یقینی طور پر اضافہ ہوگا۔

یوشو کا قصبہ جئیگو بہت بری طرح تباہ ہوا ہے اور مقامی حکام نے بی بی سی کو بتایا ہے کہ قصبے کی قریباً تمام عمارتیں تباہ ہو گئی ہیں۔

چنگھائی، چین کا دور افتادہ مغربی پہاڑی صوبہ ہے۔ بدھ کی صبح آنے والے زلزلے کا مرکز یوشو نامی ضلعے کے قریب تھا جہاں کے ایک گاؤں جیئگو کی اسی فیصد عمارتیں زمیں بوس ہو گئی ہیں۔ اس گاؤں کی آبادی ایک لاکھ کے لگ بھگ تھی۔

اگرچہ چنگھائی میں آنے والے زلزلے کی شدت چھ اعشاریہ نو تھی لیکن اس کا مرکز سطح زمین سے صرف دس کلو میٹر نیچے تھا جس کی وجہ سے زیادہ تباہی پھیلی ہے۔

اسی بارے میں