یورپ:پروازیں دوبارہ بحال ہوگئیں

اپریل میں آئسلینڈ کے آتش فشاں سے نکلنے والی راکھ سے یورپی فضائی حدود بری طرح متاثر ہوئے جمہوریہ آئرلینڈ، شمالی آئرلینڈ اور سکاٹ لینڈ کی تمام پروازوں پر آتش فشاں سے نکلنے والی راکھ کے خطرے کے باعث لگائی گئی وقتی پابندی ختم کر دی گئی ہے اور یہ پروازیں اب بحال ہو گئی ہیں۔

راکھ آئس لینڈ کے اسی آتش فشاں سے آ رہی ہے جس کی وجہ سے اپریل میں مسلسل چھ روز تک یورپ کے بیشتر ائرپورٹ بند کر دیے گئے تھے۔

جمہوریہ آئرلینڈ اور شمالی آئرلینڈ نے منگل چار مئی کی صبح سات سے دن کے ایک بجے تک تمام پروازوں پر پھر پابندی عائد کر دی تھی۔ اس کے علاوہ سکاٹ لینڈ کے کچھ علاقوں میں بھی ہوائی اڈے متاثر ہوئے تھے۔

پیر کی شام چھ بجے سکاٹ لینڈ کے علاقے آوٹر ہیبریڈیز کی فضائی حدود کو ہر طرح کی پروازوں کے لیے بند کر دیا گیا تھا۔

آئس لینڈ کے آتش فشاں کی راکھ کی وجہ سے پورے یورپ میں فضائی سروس بری طرح متاثر ہوئی تھی اور اپریل میں مسلسل چھ روز تک یورپ کے اکثر ملکوں میں پروازیں بند رہیں۔

موسمیات کے ماہرین کا کہنا ہے کہ آئس لینڈ کے آتش فشاں سے اٹھنے والے راکھ کے بادل جنوب کی جانب بڑھ رہے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ اس ہفتے کے دوران شمال سے آنے والی ہواوں سے پھر پروازوں کا متاثر ہونے کا امکان ہے۔

مسافروں کو ہدایت دی گئی ہے کہ وہ ائرپورٹ جانے سے پہلے اپنی پرواز کی ممکنہ روانگی کی تصدیق کر لیں۔

اسی بارے میں