نیویارک کار بم:’پاکستانی گرفتار‘

نیو یارک کے ٹائم سکوائر میں حملے کی ناکام کوشش کے الزام میں اطلاعات کے مطابق پاکستان میں گرفتاریاں عمل میں آئی ہیں۔

خبر رساں ایجنسیوں نے پاکستانی حکام کے حوالے سے بتایا ہے کہ گرفتار ہونے والوں میں اسلام آباد میں امریکی سفارتخانے کے لیے کیٹرنگ کرنے والی فرم کا ایک مالک بھی شامل ہے۔

یہ واضح نہیں کہ یہ گرفتاریاں کب کی گئیں لیکن یہ دو امریکی حکام کے پاکستان کے دورے کے بعد کی گئی تھیں۔

مقدمے کا مرکزی ملزم پاکستانی نژاد امریکی شہری فیصل شہزاد حملے کی مبینہ ناکام کوشش کے دو روز بعد پکڑا گیا تھا۔ ان پر پانچ نکاتی فرد جرم عائد کی گئی ہے جس کا انہوں نے ابھی جواب نہیں دیا۔

عدالتی دستاویزات کے مطابق فیصل شہزاد نے اعتراف کیا ہے کہ انہوں نے ٹائم سکوائر پر کار کو بم سے اُڑانے کی کوشش کی تھی۔ دستاویزات میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ انہوں نے بم بنانے کی تربیت وزیرستان میں حاصل کی تھی۔

اسلام آباد میں گرفتاریوں کی خبر سے پہلے امریکی سفارتخانے نے اپنی ویب سائیٹ پر نوٹس شائع کیا تھا کہ گرفتار ہونے والے شخص کی کیٹرنگ فرم کا تعلق ’دہشت گرد تنظیموں‘ سے ہو سکتا ہے۔

خبر رساں ایجنسیوں کے مطابق پاکستانی حکام نے انہیں بتایا کہ چار یا پانچ لوگوں کو گرفتار کیا گیا ہے۔ اس سے پہلے پاکستان کا دورہ کرنے والے امریکی حکام جنرل جیمز جونز اور سی آئی اے کے ڈائریکٹر لیون پنیٹا نے پاکستانی حکام کا اس مقدمے میں تفتیش میں تعاون پر شکریہ ادا کیا۔

اسی بارے میں