تشدد کے متعلق انکوائری ہو گی

بنیامین محمد
Image caption بنیامین محمد نے الزام لگایا تھا کہ ان پر تشدد کا برطانوی سکیورٹی سروسز کو علم تھا

برطانیہ کے وزیرِ خارجہ ولیم ہیگ ایک ایسی انکوائری کا حکم دینے والے ہیں جو ان الزامات کی تحقیقات کرے گی کہ کیا برطانوی سکیورٹی سروسز بیرونِ ملک برطانوی شہریوں پر تشدد میں ملوث رہی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اس کی تحقیقات جج کریں گے اور اس کی تفصیلات کا اعلان جلد کر دیا جائے گا۔

کنزرویٹیوز اور لبرل ڈیموکریٹس کافی عرصے سے مطالبہ کرتے رہے ہیں کہ برطانیہ میں سکونت اختیار کرنے والے بنیامین محمد کے ان دعووں کی تحقیقات کی جائیں جن میں انہوں نے الزام لگایا تھا کہ برطانوی ایجنٹس ان پر امریکیوں کی طرف سے کیے گئے تشدد کے متعلق اچھی طرح جانتے تھے۔

سابق لیبر حکومت کا موقف تھا کہ برطانیہ نہ تو تشدد کا استعمال کرتا ہے نہ ہی حمایت۔

برطانیہ کی حقوقِ انسانی کی تنظیم، شہری آزادی کے کارکن اور دارالعوام کی دو کمیٹیاں بنیامین محمد کے ان دعووں کی تحقیقات کا مطالبہ کرتی رہی ہیں کہ ان کی پاکستان میں 2002 میں گرفتاری کے بعد ان پر ہونے والے تشدد کا برطانیہ کو علم تھا۔

ولیم ہیگ نے بی بی سی کو بتایا کہ نئی حکومت بنیامین محمد اور دیگر افراد کی طرف سے لگائے گئے الزامات کی تہہ تک جانا چاہتی ہے۔

اسی بارے میں