عراق: انتخابی نتائج کی عدالتی توثیق

عراقی سپریم کورٹ نے ملک کے پارلیمانی انتخاب میں ایاد علاوی کی عراقیہ پارٹی کی فتح کی توثیق کر دی ہے۔

عدالتِ عظمٰی کے اس فیصلے کے بعد مخلوط حکومت کے قیام کے لیے سیاسی جماعتوں کے درمیان مذاکرات کی راہ کھل گئی ہے۔

خیال رہے کہ عراقی الیکشن کمیشن نے مئی کے وسط میں دو ہفتے تک جاری رہنے والی ووٹوں کی گنتی کے بعد بغداد اور مضافاتی علاقے میں سابقہ نتائج کو برقرار رکھنے کا اعلان کیا تھا اور اس فیصلے کو توثیق کے لیے وفاقی عدالت کو بھیج دیا گیا تھا۔

عراق میں مارچ کے مہینے میں ہونے والے انتخابات میں کوئی بھی جماعت تین سو پچیس نشستوں کے ایوان میں اکثریت حاصل نہیں کر سکی تھی اور ایاد علاوی کی جماعت نے بہت کم فرق سے فتح حاصل کی تھی۔

نتائج سامنے آنے کے بعد اس وقت کے وزیراعظم نوری المالکی نے ووٹوں کی دوبارہ گنتی کا مطالبہ کیا تھا۔

ان کے اتحاد نے ان انتخابات میں نواسی نشستیں حاصل کی تھیں جو ایاد علاوی کے اتحاد کی نشستوں سے صرف دو نشستیں کم تھیں۔

اسی بارے میں