افغانستان: ناروے کے چار فوجی ہلاک

فائل فوٹو
Image caption رواں سال کے دوران کیاون امریکی فوجیوں سمیت غیر ملکی افواج کے ستاسی اہلکار ہلاک ہو چکے ہیں

افغانستان میں حکام کے مطابق سڑک کے کنارے نصب بم پھٹنے سے ناروے کے چار فوجی ہلاک ہو گئے ہیں۔

اتوار کو افغانستان میں تعینات ناروے کی فوج کی جانب سے جاری کردہ بیان کے مطابق یہ ہلاکتیں شمالی صوبے فریاب میں ہوئی ہیں۔

بیان کے مطابق سڑک کے کنارے نصب بم فوجی گاڑی کے قریب پھٹنے کے نتیجے میں چار فوجی ہلاک ہو گئے۔

سنہ دو ہزار ایک میں افغان جنگ کے آغاز سے اب تک ناروے کے نو فوجی ہلاک ہو چکے ہیں۔ افغانستان میں ناروے کے کل پانچ سو فوجی تعینات ہیں جن میں زیادہ تر کابل میں اپنے فرائض انجام دیتے ہیں۔

اس واقعے سے پہلے افغانستان میں رواں سال کے دوران کیاون امریکی فوجیوں سمیت غیر ملکی افواج کے ستاسی اہلکار ہلاک ہو چکے ہیں جو نو سال کے دوران اتحادی افواج کا کسی بھی مہینے ہونے والا سب سے برا جانی نقصان ہے۔

یاد رہے کہ چند روز قبل صدر اوباما نے امریکی حکومت میں شامل اہم افراد کے بارے میں ریمارکس دینے پر افغانستان میں امریکی فوجی اور نیٹو کے سربراہ جنرل سٹینلے میک کرسٹل کو برطرف کر دیا تھا۔ان کی جگہ جنرل پیٹریئس کو افغانستان میں امریکی اور نیٹو افواج کا کمانڈر مقرر کیا گیا ہے۔

اسی بارے میں