لبنان: آیت اللہ محمد حسین گزر گئے

سید محمد فضل اللہ
Image caption ان کی تعلیمات سے لبنان میں حزب اللہ نے جنم لیا

بیروت ہسپتال کے ذرائع کا کہنا ہے کہ لبنان میں اہل تشیعہ کے ایک سرکردہ رہنما آیت اللہ سید محمد حسین فضل اللہ اتوار کو انتقال کر گئے۔ ان کی عمر چوہتر سال تھی۔

آیت اللہ سید محمد فضل اللہ کے پیروکار کی ایک بڑی تعداد لبنان کے علاوہ خلیج اور وسط ایشیا میں بھی ہے۔

وہ عراق کے شہر نجف کے ایک لبنانی خاندان میں پیدا ہوئے، نجف ہی میں انہوں نے اپنی تمام تعلیم مکمل کی اور بعد میں لبنان منتقل ہو گئے۔

وہ ایران میں آیت اللہ خمینی کے انقلاب کے حامی تھے اور ان کی تعلیمات نے لبنان میں چھاپہ مار گروپ حزب اللہ کے قیام میں بنیادی کردار ادا کیا۔

امریکہ انہیں اسی بنا پر انہیں شدت پسندوں کا سرپرست قرار دیتا رہا ہے۔

ایت اللہ محمد فضل امریکہ پر شدید ترین تنقید کرنے والوں میں سے تھے وہ کم و بیش جمعہ کے ہر خطبے میں امریکی پالیسیوں خاص طور پر اسرائیل سے اس کے تعلقات اور مشرقِ وسطیٰ میں اس کے کردار پر کڑی نکتہ چینی کرتے تھے۔

اس کے علاوہ انہیں ان کے معتدلانہ خیالات کی بنا پر ایک خاص اہمیت حاصل تھی۔ خاص طور پر خواتین کے بارے میں ان کے خیالات دیگر شیعہ رہنماؤں کی طرح کٹر نہیں تھے۔

اس کے علاوہ انہوں نے متعدد اہم فتوے بھی جاری کیے جن میں عاشورے اور ماتم کے دوران خون بہانے پر پابندی کا فتویٰ خاص اہمیت کا حامل ہے۔

اسی بارے میں