افغانستان: پانچ امریکی فوجی ہلاک

فائل فوٹو
Image caption رواں سال کے آغاز سے اب تک افغانستان میں غیر ملکی فوج کے تین سو پچاس فوجی ہلاک ہو چکے ہیں

افغانستان میں حکام کے مطابق سڑک کے کنارے نصب بم کے پھٹنے کے دو مختلف واقعات میں پانچ امریکی فوجی ہلاک ہو گئے ہیں۔

نیٹو کے مطابق پیر کو مشرقی افغانستان میں سڑک کے کنارے نصب بم کے پھٹنے کے پہلے واقعے میں تین جبکہ جنوبی افغانستان میں پیش آنے والے دوسرے واقعے میں دو امریکی فوجی ہلاک ہو گئے۔

نیٹو کا کہنا ہے کہ پیر کو حادثاتی طور پر ایک بم پھٹنے سے بھی ایک امریکی فوجی ہلاک گیا۔ اس طرح ایک دن میں مجموعی طور پر چھ امریکی فوجی ہلاک ہوئے ہیں۔

رواں سال اب تک افغانستان میں غیر ملکی افواج کے تین سو پچاس فوجی ہلاک ہو چکے ہیں۔ صرف جون میں ہونے والی ہلاکتیں دو ہزار ایک سے لیکر اب کسی ایک ماہ میں ہونے والی سب سے زیادہ ہلاکتیں تھیں۔

ُادھر قندھار میں موٹر سائیکل میں نصب بم پھٹنے سے کار میں سوار ایک شہری ہلاک ہو گیا ہے۔ دھماکے کی وجہ سے قریبی عمارتوں کو بھی شدید نقصان پہنچا ہے۔

دریں اثنا افغان شہر مزار شریف میں ہزاروں افراد نے عام شہریوں کی بڑھتی ہوئی ہلاکتوں کے خلاف مظاہرہ کیا ہے۔ بدھ کو ہی امریکی فوجی کی فائرنگ سے دو شہری ہلاک ہو گئے تھے۔بدھ کو نیٹو کے فینڈلی فائر میں پانچ افغان فوجی ہلاک ہو گئے تھے۔

افغانستان میں نیٹو اور امریکی فوج کے نئے سربراہ جنرل ڈیوڈ پیٹریئس نے کہا تھا کہ وہ سابق سربراہ کی پالیسی کو جاری رکھتے ہوئے عام شہریوں کی ہلاکتوں کو کم رکھنے کی کوشش کریں گے۔

اسی بارے میں