غزہ:امدادی جہاز مصر میں لنگر انداز

امدادی جہاز

مصر میں حکام نے بتایا ہے کہ غزہ کے لیے امداد لے کر جانے والے ایک بحری جہاز کو اسرائیلی دباؤ کے بعد مصر میں لنگر انداز کر دیا گیا ہے۔

مالڈوویا کا یہ جہاز اسرائیل کی طرف سے غزہ کی ناکہ بندی کی مخالفت کرتے ہوئے وہاں امداد لے کر جا رہا تھا۔ حکام نے بتایا ہے کہ جہاز کو الاریش میں لنگر انداز کیا گیا ہے۔

لیبیا کے حکمران کرنل معمر قذافی کی طرف سے حاصل کیا گیا یہ جہاز سنیچر کو امدادی سامان کے ساتھ یونان سے روانہ ہوا تھا۔

اسرائیل نے جہاز کو رکوانے کے لیے اقوام متحدہ سے مدد مانگی تھی اور مالڈووا اور یونان سے بھی رابطہ کیا تھا۔ تاہم امداد لے کر جانے والی اس مہم کے منتظمین کا کہنا ہے کہ وہ غزہ ضرور جائیں گے۔

اس سے قبل مئی میں غزہ امداد لے کر جانے والے ایک جہاز پر اسرائیل حملے میں نو لوگ ہلاک ہو گئے تھے۔ اسرائیل نے کہا کہ اس کے فوجیوں نے اپنے دفاع میں کارروائی کی تھی لیکن عالمی سطح پر اس کی شدید مذمت کی گئی۔

’امید‘ نامی جہاز پر دو ہزار ٹن امدادی سامان لدا ہوا ہے جس میں خوراک، پکانے کا تیل، ادویات اور مکانات کی تعمیر کا سامان شامل ہے۔جہاز کو قذافی انٹرنیشنل نامی خیراتی ادارے نے کرائے پر حاصل کیا ہے۔ ادارے کے سربراہ کرنل قذافی کے بیٹے سیف الاسلام قذافی ہیں۔

اسی بارے میں