قندھار خودکش حملہ، آٹھ ہلاک

افغانستان میں حملے کی فائل فوٹو
Image caption حملے میں تین نیٹو فوجی بھی ہلاک ہوئے ہیں

افغانستان کے جنوبی صوبے قندھار میں طالبان کی جانب سے کیے گئے ایک خودکش حملے میں آٹھ افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔

ہلاک ہونے والوں میں تین نیٹو فوجی اور پانچ افغان شہری شامل ہیں۔

حملہ قندھار میں واقع ایک پولیس مرکز پر کیا گیا ہے۔

کار پر سوار خودکش بمبار نے پولیس مرکز کے اندر اپنی گاڑی داخل کردی جس کے نتیجے میں آٹھ ہلاکتیں ہوئیں ہیں۔

حملے سے قبل ایک حملے کے دوران شدت پسندوں نے راکٹ داغے اور مشین گن سے حملہ کیا تھا۔

منگل کو ہی ایک افغان فوجی نے ہلمند صوبے میں تین برطانوی فوجیوں کو ہلاک کردیا تھا۔

نیٹو افواج کا کہنا ہے کہ جس افغان فوجی نے تین برطانوی فوجیوں کو ہلاک کیا ہے اس کی تلاش جاری ہے۔

حکام کا کہنا ہے کہ پولیس مرکز پر ہونے والا حملہ نیشنل سول آرڈر پولیس کے خلاف تھا۔ یہ پولیس فورس قومی پولیس فورس کے ماتحت کام کرتی ہے اور قندھار میں ہی 11 پولیس چیک پوائنٹس چلاتی ہے۔

طالبان کے ترجمان قاری یوسف احمدی کا نے کہا ہے کہ حملہ طالبان نے کیا ہے۔ انہوں نے یہ بات خبر رساں ایجنسی ایسوسی ایٹڈ پریس کو فون کرکے بتائی ہے۔

طالبان کے ترجمان کے مطابق منگل کو ہونےوالے حملے میں 13 غیر ملکی فوجی اور آٹھ افغان سیکورٹی اہلکار ہلاک ہوئے ہیں۔

نیٹو کا کہنا ہے کہ حالیہ دنوں میں یہ تیسری بار ہے کہ افغان اور نیٹو فوجیوں نے اس طرح کے حملے کو ناکام بنایا ہے۔

اسی بارے میں