نیلسن منڈیلا 92 برس کے ہوگئے

نیلسن منڈیلا
Image caption نیلسن منڈیلا اپنے گھروالوں کے ساتھ سالگرہ منائیں گے

جنوبی افریقہ کے سابقِ صدر نیلسن منڈیلا اتوار کو بانوے برس کے ہوگئے ہیں۔

پہلی بار دنیا بھر میں یہ دن نیلسن منڈیلا کے عالمی دن کے طور پر منایا جا رہا ہے۔

اس دن کو دنیا میں امن اور آزادی کے لیے نیلسن منڈیلا کے اہم کردار کے لیے یاد کیا جا رہا ہے۔

گزشتہ برس اقوام متحدہ نے اعلان کیا تھا کہ نیلسن منڈیلا کی سالگرہ کو عالمی دن کے طور پر منایا جائے گا۔

اس موقع پر لوگوں سے اپیل کی گئی ہے کہ وہ اس دن کے موقع پر کچھ وقت کے لیے کمیونٹی کے فلاح کے لیے کام کریں۔

منڈیلا نے جنوبی افریقہ میں جمہوریت کے قیام کے لیے ستاسٹھ سال تک جدوجہد کی تھی۔ اس لیے اقوام متحدہ نے اپنی اپیل میں لوگوں سے کہا ہے کہ ’دنیا بھر میں لوگ نیلسن منڈیلا کی سالگر کے موقع کم از کم ستاسٹھ منٹ کے لیے اپنی کمیونٹی کے فلاح کے لیے کام کریں۔‘

خراب صحت کی وجہ سے نیلسن منڈیلا عام زندگی سے الگ تھلگ ہوگئے ہیں اور کہا جارہا ہے کہ وہ سالگرہ اپنے خاندان کے ساتھ منائے گیں۔

نیلسن منڈیلا نے اپنی نواسیویں سالگرہ کے موقع پر بین الاقوامی مشہور شخصیات کی ایک تنظیم بنائی تھی جس کا نام ’دی ایلڈرز‘ یا بزرگ رکھا گیا تھا۔ اس انجمن کا مقصد دنیا کو درپیش فوری مسائل کے حل تلاش کرنا ہے۔

اس تنظیم میں امریکہ کے سابق صدر جمی کارٹر اور اقوامِ متحدہ کے سابق سیکریٹری جنرل کوفی عنان بھی شامل ہیں۔

اسی بارے میں