حکیم اللہ محسود پر پانچ ملین ڈالر کا انعام

امریکی وزیر خارجہ نے تحریک طالبان پاکستان کو کالعدم تنظیموں کی فہرست میں شامل کر لیا ہے۔

امریکی وزارت خارجہ کی ویب سائٹ کے مطابق وزیر خارجہ ہیلری کلنٹن نے تحریک طالبان پاکستان کو یکم ستمبر کو کالعدم تنظیموں کی فہرست میں شامل کردیا ہے۔

اس کے علاوہ امریکہ نے تحریک طالبان پاکستان کے دو رہنما حکیم اللہ محسود اور ولی الرحمان کو بھی عالمی دہشت گرد قرار دیا ہے۔

امریکی وزارت قانون نے طالبان رہنما حکیم اللہ محسود اور ولی الرحمان پر پانچ ملین ڈالر کے انعام کا بھی اعلان کیا ہے۔

امریکی وزارت خارجہ کے مطابق کالعدم تحریک طالبان پاکستان نے پاکستانی اور امریکی مفادات پر کئی حملوں کی ذمہ داری قبول کی ہے۔

حکیم اللہ محسود اگست دو ہزار نو سے تحریک طالبان پاکستان کے سربراہ ہیں جبکہ ولی الرحمان جنوبی وزیرستان میں طالبان امیر ہیں۔

دوسری جانب امریکہ نے تیس دسمبر کو افغانستان کے علاقے خوست میں سات سی آئی اے ایجنٹوں کی ہلاکت میں تحریک طالبان پاکستان کے رہنما حکیم اللہ محسود پر فرد جرم عائد کردیا ہے۔

یاد رہے کہ خودکش حملے میں سات ایجنٹوں کی ہلاکت ہوئی تھی۔

اس خودکش حملے کی ذمہ داری طالبان نے قبول کرتے ہوئے کہا ہے کہ افغان فوج میں شامل ان کے ایک ساتھی نے یہ خودکش حملہ کیا ہے۔

طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے کہا کہ خودکش حملہ آور نے فوجی یونیفام پہن رکھا تھا اور انھوں نے فوجی اڈے کی سکیورٹی کو دھوکہ دیتے ہوئے اڈے کی ورزش گاہ میں دھماکہ کر دیا۔

اسی بارے میں