بغداد: خودکش حملے میں سات ہلاک

بغداد خودکش حملہ
Image caption چار روز قبل امریکی فوج کی جانب سے عراق میں فوجی کارروائیوں کے اختتام کے بعد سے یہ سب سے مہلک حملہ ہے

عراق کے دارالحکومت بغداد میں ایک فوجی مرکز پر ہونے والے مبینہ خودکش حملے میں کم از کم سات افراد ہلاک اور بیس سے زائد زخمی ہو گئے ہیں۔

یہ مبینہ خودکش حملہ اتوار کی صبح گیارہ بجے فوج میں بھرتیوں کے مرکز رسافہ ملڑی کمانڈ ہیڈ کواٹرز پر کیا گیا۔

چار روز قبل امریکی فوج کی جانب سے عراق میں فوجی کارروائیوں کے اختتام کے بعد سے یہ سب سے مہلک حملہ ہے۔

تین ہفتے قبل اسی فوجی مرکز پر القاعدہ کی جانب سے کیے گئے ایک حملے میں پچاس سے زائد افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

بغداد میں بی بی سی کے نامہ نگار گیبریل گیٹ ہاوس کا کہنا ہے کہ اس واقعے کے بارے میں عینی شاہدین کے مختلف بیانات سامنے آ رہے ہیں۔

نامہ نگار کے مطابق بعض عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ انہوں نے کم از کم تین خودکش بمباروں کو دیکھا جو پیدل تھے اور فوجی مرکز پر حملے کی کوشش کر رہے تھے۔

ان میں سے دو حملہ آوروں کو فوجیوں نے گولیاں مار کر ہلاک کر دیا جس کے دوران دو بڑے دھماکے ہوئے۔

تیسرا حملہ آور جو زخمی تھا بعد میں ہلاک ہو گیا۔

اسی بارے میں